دہلی میں کشمیری طلباء پر بغاوت کا مقدمہ بھارتی بوکھلاہٹ کی دلیل ہے، ابو الہاشم ربانی

دہلی میں کشمیری طلباء پر بغاوت کا مقدمہ بھارتی بوکھلاہٹ کی دلیل ہے، ابو ...

  

لاہور(خبر نگار خصوصی)جماعۃ الدعوۃ لاہور کے مسؤل ابو الہاشم ربانی نے کہا ہے کہ دہلی میں کشمیری طلباء پر بغاوت کا مقدمہ بھارتی بوکھلاہٹ کی دلیل ہے۔ پاکستان کا سبز ہلالی پرچم آزادی اور مظلوموں کے حقوق کا علمبردار بن چکا ہے۔ پاکستانی پرچم کا مقبوضہ کشمیر کی طرح دہلی کی نہرو یونی ورسٹی میں لہرانا اور وہاں پاکستان زندہ باد کے نعروں کا لگنا اس بات کی علامت ہے کہ دو قومی نظریے کا حامل وطن عزیز آج بھی کشمیری مسلمانوں کی اُمیدوں کا مرکز ومحور ہے۔ کشمیر سے ہمارے رشتے کلمہ طیبہ لاالہ الااللہ محمد رسول اللہ سے جڑے ہیں جو کبھی نہ ٹوٹنے والے ہیں۔وہ گزشتہ روز تقویٰ مسجد گلشن راوی میں کارکنان کی تربیتی نشست سے خطاب کررہے تھے ۔ اُنہوں نے کہا کہ سبزہلالی پرچم پاکستان کا ہی نہیں بلکہ ہر اُس مظلوم کا پرچم ہے جس کی آزادی اور حقوق چھینے گئے۔ جب تک کشمیری اپنی آرزو کے مطابق ہندو بنئے سے مکمل آزادی حاصل نہیں کر لیتے ہر پاکستانی ہر لحاظ سے کشمیریوں کے ساتھ دے۔ ابو الہاشم ربانی نے کہا کہ تحریک آزادی کشمیر لازوال شہادتوں اور قربانیوں کی پرعزم درخشاں تحریک ہے۔ پچھلی سات دہائیوں سے انڈین غاصبانہ فوجی قبضہ کے خلاف کشمیری آزادی کے لیے تحریک چلارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر کی آزادی پاکستان کی بقا اور سلامتی کے لئے ناگزیر ہے۔ اس کے بغیر پاکستان ہمیشہ خطرات سے دو چار رہا ہے۔ ہم مظلوم کشمیری مسلمانوں کے ساتھ ہیں اور انہیں آزادی ملنے تک ہر لحاظ سے ان کا ساتھ دیتے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری مسلمانوں کی جدوجہد آزادی جاری ہے اور جاری رہے گی۔ ان شاء اللہ شہیدوں کا خون رنگ لائے گا اور سبز ہلالی پرچم اسی طرح لہراتا رہے گا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -