اسلامی تحریک طلبہ پاکستان کے زیر اہتمام یوم حیاء منایاگیا

اسلامی تحریک طلبہ پاکستان کے زیر اہتمام یوم حیاء منایاگیا

  

لاہور( اپنے نامہ نگار سے ) اسلامی تحریک طلبہ پاکستان نے گذشتہ روز یوم حیاء منایا، تقاریب کا اہتمام کیا گیامرکزی دفتر میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین تحریک غلام عباس صدیقی نے کہا کہ حیاء ایمان کا اہم ترین لازمی جزو ہے اگر حیاء ختم ہوجائے تو انسان حیوان بن جاتا ہے جس معاشرے سے حیاء ختم ہوجائے وہ جنگل کا منظر پیش کرنا شروع کردیتا ہے مسلمان حیاء کو عام کرنے کیلئے اپنی زندگیوں میں اسلام کو زندہ کریں انہوں نے کہا کہ ویلنٹائن ڈے کے نام پر بے حیائی پھیلاکر پاکستان کا مذاق اٹھایا گیاانہوں نے میڈیا کے منفی کرادر پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ میڈیا نے اس دن کو عام کرنے کیلئے میڈیا کوریج دے کر بے حیائی پھیلانے میں گھناؤنا کردار ادا کیا پیمرا اس کا نوٹس لے ۔اسلامی تحریک طلبہ کی تقریب میں جنرل سیکرٹری ذکی الدین،ترجمان محمد عدنان، فہیم جاوید ودیگر رہنماؤں نے خصوصی شرکت کی ۔اسلامی تحریک طلبہ کے سربراہ نے کہا کہ حیاء عام کرنے کیلئے یوم حیاء منانے والے اسلام پسند پیٹ فارمز کو اسلامی تحریک طلبہ خراج تحسین پیش کرتی ہے۔نوجوان اپنے اندر حیاء جیسا گوہر نایاب پیدا کرنے کیلئے اسلام کی سنہری تاریخ کا مطامعہ کریں سیکولرازم کا راستہ ہر قیمت پر روکا جائے گا پاکستان اسلام کے نام پر قائم ہوا یہاں بے حیاء ،عریانی فحاشی ،بدتہذیب کیخلاف پر امن جدوجہد کرتے رہیں گے،حکومت بے حیائی کے خاتمے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدام کرے انہوں نے کہا کہ بے حیائی اور یوم تہذیب بد کے سپورٹر سیاستدان نظریہ پاکستان کے قاتل ہیں قوم نے ان کے چہرے دیکھ لئے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں اگر اسلامی نظام قائم ہوتا تو ایسی بے غیرتی کرنے کی ہرگز اجازت نہ ہوتی ،حیاء پر مبنی معاشرہ قائم ہوتا۔لیکن موجودہ نظام حکومت اسلام کی ترجمانی کرنے میں مکمل طور پر ناکام ہوگیا۔قوم کے جذبات کے لئے اسلام نظام کا قیام از حد لازم ہوگیا قوم اس کیلئے میدان عمل میں اترے اگر قوم اسلامی نظام کیلئے باہر نہ نکلی تو آنے والا کل مزید بے حیائی،بے شرمی پر مبنی ہوگا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -