صوبائی دارالحکومت ،پابندی کے باوجود پتنگ بازی شروع ،چھٹی کے روز منی بسنت منائی گئی

صوبائی دارالحکومت ،پابندی کے باوجود پتنگ بازی شروع ،چھٹی کے روز منی بسنت ...

  

لاہور(اپنے نامہ نگارسے، کرائم رپورٹر) پتنگ بازی پر پابندی کے باوجود خطرناک کھیل کا سلسلہ شروع ہوگیاہے لاہور میں گزشتہ روز اتوار کے دن پتنگ بازوں نے منی بسنت منائی اور شہرکے مختلف علاقوں کے دن بھر پتنگ بازی جیسے خطرناک کھیل کا سلسلہ جاری رہاہے دن بھر خوف طاری رہا ہے لاہور کے جن علاقوں میں پتنگ بازی جیسے خطرناک کھیل کا سلسلہ جاری رہاہے ان علاقوں میں غاز ی آباد ،مصطفےٰ آباد،باغبانپورہ اور کوٹ خواجہ سعید سمیت والٹن روڈ ،اچھرہ ،اقبال ٹاون کے علاقوں میں سب سے زیادہ پتنگ بازی دیکھنے میں آئی ہے جس میں پتنگ بازوں نے دن بھر پتنگ بازی کی شہریوں میں خوف وہراس پایا جانے لگاہے اور شہریوں نے پتنگ بازی جیسے خطرناک کھیل پر پابندی کے باوجود اس کے سلسلے کے ایک مرتبہ دوبارہ شروع ہونے پر زبردست احتجاج کیاہے دوسر ی جانب آل پاکستان پتنگ متاثرین کمیٹی چئیرمین شیخ امین قادری ،وائس چئیرمین اکرام اللہ خان کا کڑ نے کہاپتنگ بازی کی وجہ سے 9مختلف قسم کے حادثات میں سینکڑوں افراد کی ہلاکت کی وجہ سے سپریم کورٹ نے پابندی عائد کی تھی پتنگ بازی کی اجازت مانگنے اور دینے والے حادثات کی صورت میں سپریم کورٹ کے آگے جوابدہ ہونگے ،سپریم کورٹ کے حکم پر سختی سے عمل درآمد کروائیں گے ۔اگر بسنت کی ایک دن کی بھی اجاز ت دی گئی تو متاثرین سراپا احتجاج ہونگے ۔دوسری جانب ڈی آئی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف کی ہدایت پر گزشتہ روز لاہور پولیس نے پتنگ بازوں کے خلاف گرینڈ آپریشن کیاجس میں متعدد پتنگیں،چرخیاں اور ڈور قبضے میں لے کر14 ملزمان کو گرفتارکر کے ان کے خلاف 14مقدمات درج کر لئے گئے۔تھانہ ملت پارک میں پتنگ بازی کے 6مقدمات ،تھانہ شاہدر ہ ٹاؤن میں پتنگ بازی کے 2مقدمات ، تھانہ وحدت کالونی میں پتنگ بازی کے 2مقدمات ، تھانہ قلعہ گجر سنگھ میں 01تھانہ گڑھی شاہو میں 01تھانہ سمن آباد میں 01تھانہ ساندہ میں پتنگ بازی کا 01مقدمہ درج کر کل 14ملزمان کو گرفتار کر لیا۔اس موقع پرڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے تمام ڈویژنل ایس پیز کو سخت ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں پتنگ بازوں اور پتنگ ساز فیکٹریوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کیاجائے ۔

مزید :

صفحہ اول -