بجلی کی غیر منسفانہ تقسیم بے نقاب، وی آئی پیز کے 262فیڈرز لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ

بجلی کی غیر منسفانہ تقسیم بے نقاب، وی آئی پیز کے 262فیڈرز لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ

  

لاہور(شہبا زاکمل جندران)بجلی کی 9 تقسیم کار کمپنیوں کی غیر منصفانہ تقسیم بے نقاب ہوگئی ۔ملک بھر میں وی آئی پیز کے 2سو 62فیڈرز کو لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دیدیا۔ہسپتالوں ، واٹر سپلائی کی سکیموں ،دفاعی تنصیبات اور ائیرپورٹس کو بلاتعطل بجلی کی فراہمی کی آڑ میں سب سے زیادہ 90فیڈر آئیسکو نے دوسرے نمبر پر 40فیڈرپیسکونے جبکہ تیسرے نمبر پر35فیڈرلاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی نے لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قرارد ے رکھے ہیں۔ جہاں 24گھنٹوں میں ایک سیکنڈ کے لیے بھی بجلی آنکھ نہیں جھپکتی۔معلوم ہواہے کہ ملک میں سردی اور بجلی کی طلب میں واضح کمی کے باوجود دیہاتوں اور شہروں میں کئی کئی گھنٹوں کی بدترین لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے۔لیکن دوسری طرف ملک میں ایسے علاقے بھی پائے جاتے ہیں۔ جہاں بجلی کی تقسیم کار کمپنیاں ایک سیکنڈ کے لیے بھی لوڈشیڈنگ نہیں کرتیں۔اور بلاتعطل بجلی کی سپلائی دیتی ہیں۔بتایا گیا ہے کہ ملک میں بجلی کی 9تقسیم کار کمپنیوں میں سب سے زیادہ اسلام آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 90فیڈرز کو لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دے رکھا ہے۔ اسی طرح دوسرے نمبر پر پشاور الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 40فیڈرز کو ،تیسرے نمبر پر لاہور الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 35فیڈروں کو چوتھے نمبر پرفیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 27فیڈروں کو پانچویں نمبر پرملتان الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 25فیڈروں کو چھٹے نمبر پرسکھر اور کوئٹہ الیکٹر سپلائی کمپنی نے 13، 13فیڈٖروں کو ساتویں نمبر پرگوجرانوالہ الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 10فیڈروں کو جبکہ آٹھویں نمبرحیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی نے 9فیڈروں کوبجلی کی لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قراردے رکھا ہے۔صرف قبائلی علاقوں کی ٹرائبل ایریا الیکٹرک سپلائی کمپنی ایسی ہے۔ جس میں کسی ایک بھی فیڈر کو لوڈشیڈنگ سے الگ نہیں رکھا گیا۔ذرائع کے مطابق متذکرہ بالا کمپنیوں نے ہسپتالوں ، واٹر سپلائی کی سکیموں ،دفاعی تنصیبات اور ائیرپورٹس کو بلاتعطل بجلی کی فراہمی کی آڑ میں ان 2سو 62فیڈروں کو لوڈشیڈنگ فری قرار دے رکھا ہے۔ اورملک کے 18کروڑ عوام ان فیڈروں سے منسلک رہائشی آبادیوں کے چند لاکھ افراد کی لوڈشیڈنگ فری زندگی کو رشک کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔

مزید :

صفحہ آخر -