سعودی کمپنی سے فراڈ کر کے پاکستانی ملازم 18لاکھ روپے لیکرفرار

سعودی کمپنی سے فراڈ کر کے پاکستانی ملازم 18لاکھ روپے لیکرفرار

  

جدہ (بیورو رپورٹ )سعودی کمپنی سے فراڈ کر کے پاکستانی ملازم رفو چکر ہو گیا ۔تفصیلات کے مطابق فیصل آباد کا رہائشی محمد نسیم ولد محمد رفیق جدہ کی کمپنی موسسہ مدنی الانشات للمقاولات العاسد میں کام کرتا تھا۔ جس نے کمپنی کو 65 ہزار سعودی ریال کا چونا لگایا اور غائب ہو گیا۔ کمپنی کے پراجیکٹ ڈائریکٹر ارتضیٰ خالد نے بتایا کہ کمپنی نے محمد نسیم جو کہ جنرل الیکٹریشن تھا اور ایک پراجیکٹ پر کام کر رہاتھا۔ 16 دسمبر 2014 ء کو کمپنی سے پراجیکٹ کے لیے 65000 سعودی ریال جو کہ پاکستانی روپوں میں کوئی اٹھارہ لاکھ کے قریب بنتے ہیں ان میں وہاں کام کرنے والے پاکستانی مزدوروں کی تنخواہیں بھی شامل تھیں لیکر گیا اور غائب ہو گیا تلاش کرنے پر پتہ چلا کہ وہ کسی طرح پاکستان چلا گیا ہے۔ اب کمپنی نے پاکستانی قونصلیٹ جدہ کے توسط سے پنجاب کے اعلیٰ اتھارٹی کو کیس بھیجا ہے جس میں اس کے تمام کوائف اور پیسے وصول کرنے کی رسید کی کاپی بھی شامل ہے تاکہ متعلقہ اتھارٹی محمد نسیم سے پیسے لیکر کمپنی کو بھجوائے اور اس طرح کے لوگوں جو پاکستان اور پاکستانیوں کی بدنامی کا باعث بنتے ہیں ان کے خلاف تادیبی کارروائی کرے تاکہ آئندہ کوئی ایسا کرنے سے پہلے سوچے کہ اس کے خلاف ایکشن ہو سکتا ہے۔

سعودی کمپنی سے فراڈ

مزید :

علاقائی -