وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سمیت زیادہ تر وزیر مشیر اور ایم پی ایز کرپشن میں ملوث ہیں،جنرل (ر) حامد خان

وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا سمیت زیادہ تر وزیر مشیر اور ایم پی ایز کرپشن میں ...

  

اسلام آباد(صباح نیوز)سابق ڈی جی احتساب کمیشن لیفٹیننٹ جنرل(ر) حامد خان نے کہا ہے کہ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا سمیت زیادہ تر وزیر مشیر اور ایم پی ایز کسی نہ کسی حوالے سے کرپشن میں ملوث ہیں۔عمران خان کے دعوے غلط ہیں کہ کے پی کے سے کرپشن کا مکمل خاتمہ کر دیا گیا ہے۔حاضر سروس اور سابق بیوروکریٹس کے کرپشن کی بھی تحقیقات جاری ہیں۔ کے پی کے حکومت نے جن کے خلاف احتساب کا قانون بنایا انہی کو ترمیم کا اختیار دے دیا۔وزیراعلیٰ کو بتا دیا تھا کہ ترمیم پیش کرنے والے کچھ دن بعد ہمارے مہمان ہوں گے۔حالیہ ترمیم سے احتساب پر فرق پڑنے کا خطرہ نہ ہوتا تو استعفیٰ نہ دیتا ۔ایک نجی ٹی وی انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ ہمارے سارے فیصلے ایگزیکٹو بورڈ اجلاس میں ہوتے ہیں جس میں پراسیکیوٹر جنرل،ڈائریکٹر انوسٹی گیشن ایڈیشنل ڈائریکٹر انوسٹی گیشن اور انوسٹی گیشن آفیسر شامل ہوتے تھے یہ ایک مشاورتی کونسل ہوتی تھی جہاں یہ فیصلہ ہوتا تھا کہ فلاں کو انکوائری میں ڈالیں یا فلاں کو گرفتار کریں یا اس انکوائری کو بند کریں۔پرویز خٹک کو کیسے خیال آ گیا کہ ایک آدمی فیصلہ کرتا تھا خیبرپختونخوا حکومت نے جن کے خلاف احتساب کا قانون بنایا انہی کو ترامیم کا اختیار دے دیا۔جنرل حامد نے کہا کہ میں نے ایک میٹنگ میں وزیراعلیٰ سے کہا تھا کہ ترمیم پیش کرنے والے کچھ دن بعد ہمارے مہمان ہوں گے۔جنرل حامد نے کہا کہ میں نے وزیراعلیٰ کے پی کے کو کوئی سوالنامہ نہیں بھیجا۔انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ پرویز خٹک کے خلاف تنگی مائنز کرپشن کیس کا ریفرنس تیار ہے۔یہ اربوں روپے کا سکینڈل ہے جس میں پرویز خٹک کے کردار ہونے کے شواہد ہیں۔ میں نے کچھ ایسے کیسز وزیراعلیٰ سے شیئر کیے تھے جن سے ان کا تعلق تھا۔وزیراعلیٰ آفس کے کرپشن میں ملوث ہونے کا دعویٰ درست ہے اس وقت پی ٹی آئی کے کئی وزراء اور ایم پی پیز کی کرپشن کے تحقیقات ہو رہی ہیں۔پختونخوا کے کئی حاضر سروس اور سابق بیوروکریٹس کے کرپشن کی بھی تحقیقات جاری ہے۔انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی نے کہا تھا کہ اینٹی کرپشن کا محکمہ احتساب کمیشن میں ضم ہو جائے گا مگر ایسا نہیں کیا گیا۔حامد خان نے کہا کہ معصوم شاہ اور ایکسین پرویز کے خلاف انکوائری جاری تھی جس سے ہمیں روکا گیا پی ٹی آئی حکومت نے سکرونٹی کے نام پر احتساب کمیشن کے آفیسران کو خوفزدہ کر دیا۔

حامد خان

مزید :

علاقائی -