سمگلنگ سے قومی خزانے کو سالانہ 300 ارب روپے کا ٹیکہ

سمگلنگ سے قومی خزانے کو سالانہ 300 ارب روپے کا ٹیکہ
سمگلنگ سے قومی خزانے کو سالانہ 300 ارب روپے کا ٹیکہ

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) اشیاءکی بیرون ممالک سمگلنگ سے قومی خزانے کو سالانہ 300 ارب روپے کا ٹیکہ لگ رہا ہے۔

بزنس کمیشن کی رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ ایرانی ڈیزل، ٹائر ، گاڑیوں اور چائے سمیت 900 ارب روپے کی 11 مصنوعات سالانہ سمگل ہوتی ہیں جن کی وجہ سے قومی خزانے کو ٹیکسز اور کسٹم ڈیوٹی کی مدات میں 300 ارب روپے کا نقصان ہورہا ہے ۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ایرانی ڈیزل کی سمگلنگ سے سرکار کو 87ارب روپے کی ڈیوٹیز سے ہاتھ دھونا پڑتا ہے جبکہ موبائل فونز کی غیر قانونی طریقے سے آمد پر ٹیکس کی مد میں 100 ارب روپے کے خسارے کاسامنا ہے۔ اس کے علاوہ گاڑیوں اور سپیئر پارٹس کی مد میں قومی خزانے کو 18 ارب روپے سالانہ نقصان ہورہا ہے۔

مزید :

بزنس -اہم خبریں -