وزیراعلی سندھ آنکھ بھی جھپکیں توکہا جاتا ہے ”سو رہے ہیں “،تھر کے ہر گاﺅں میں ایمبولینس کھڑی نہیں کر سکتے:مولا بخش چانڈیو

وزیراعلی سندھ آنکھ بھی جھپکیں توکہا جاتا ہے ”سو رہے ہیں “،تھر کے ہر گاﺅں ...
وزیراعلی سندھ آنکھ بھی جھپکیں توکہا جاتا ہے ”سو رہے ہیں “،تھر کے ہر گاﺅں میں ایمبولینس کھڑی نہیں کر سکتے:مولا بخش چانڈیو

  

حیدرآباد (مانیٹرنگ ڈیسک)مشیر اطلاعات سندھ مولا بخش چانڈیو نے کہا ہے کہ وزیراعلی سندھ آنکھ بھی جھپک لیں تو میڈیا کہتا ہے ”وہ سو رہے “ہیں ،تھر کے ہر گاﺅں میں ایمبولینس کھڑی نہیں کر سکتے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ دم کی وضاحت کی تو معاملات اور بگڑ جائیں گے ،لوگوں کو مارنے مروانے کی سیاست کبھی نہیں کی ۔

مشیر اطلاعات سندھ نے کہا کہ خامیوں کے باوجود تھر کے حالات پہلے سے بہتر ہو رہے ہیں تھر کے ہر گاﺅں میں ایمبولینس کھڑی نہیں کر سکتے۔انہوں نے کہا کہ پر امن وادی کشمیر کو سیاسی مفادات کی بھینٹ نہیں چڑھایا جانا چاہیے،سندھ کے تمام وزراءایماندار اور محنتی ہیں۔ مولا بخش چانڈیونے کہا کیا ملک میں بجلی کا مسلہ حل ہو گیا ہے ؟شہباز شریف اب مینارپاکستان پر بیٹھ کر پنکھا کیوں نہیں جھلتے۔ انہوں نے کہا کہ جنرل راحیل کے آنے کے بعد دہشتگردی کے خلاف اقدامات ہوئے ، دہشتگردوں کی حمایت کرنے والے ان کیخلاف کارروائی پر مجبور ہوئے۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -