تیسری عالمی جنگ کا خطرہ،سعودی طیارے پہنچنے کے اگلے روز ہی ترک فوج نے شام کی سرحد عبور کرلی

تیسری عالمی جنگ کا خطرہ،سعودی طیارے پہنچنے کے اگلے روز ہی ترک فوج نے شام کی ...
تیسری عالمی جنگ کا خطرہ،سعودی طیارے پہنچنے کے اگلے روز ہی ترک فوج نے شام کی سرحد عبور کرلی

  

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی طیاروں کے پہنچنے کے بعداور شیلنگ کے دوسرے روز ترک فوج شام میں داخل ہوگئی جس سے تیسری عالمی جنگ کا خطرہ پیدا ہوگیا جبکہ روس نے شام کی حدود کی حفاظت یقینی بنانے اور حکومت کا تحفظ کرنے کا اعلان کررکھاہے لیکن روس یا شام کو اعتماد میں لیے بغیر ترکی نے بھی داعش کے مبینہ جنگجوﺅں کو نشانہ بنایا۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق شام کی کرد نیوز ایجنسی کی طرف سے ایک ویڈیو جاری کی گئی ہے جس میں تباہ حال عمارتوں اور مریامین گاﺅں میں زخمی لوگوں کو بھاگتے ہوئے دیکھاگیاجبکہ اطلاعات ہیں کہ ترک آرمی شام کی سرحد عبور کرکے ملک میں داخل ہوگئے ۔

رائٹرز کے مطابق شام کی حکومت کا کہناتھاکہ ہفتے کو شام کی حدود میں داخل ہونیوالے اہلکاروں کی تعدادتقریباً100تھی جو مشین گنوں سے لیس 12ٹرکوں پر آئے تھے اور یہ دہشتگردی کیخلاف جاری آپریشن کا حصہ تھاجبکہ شام کی حکومت کا کہناتھاکہ اسلحہ و ہتھیارمہیاکیے جانے کا آپریشن عزاز کے علاقے باب السلامہ کے ذریعے جاری ہے ۔

ترک حکومت نے موقف اپنایاکہ کردجنگجوﺅں پر اپنے دفاع میں بمباری کی گئی ہے اور بارڈر کو محفوظ بناناچاہتے ہیں ۔ ہفتے کو دنیا اس وقت حیرت زدہ رہ گئی جب ترکی نے الیپو کے علاقے میں شیلنگ شروع کردی جہاں حزب اللہ کی صورت میں شام کی اپوزیشن کا مضبوط گڑھ موجود ہے ۔یہ بھی کہاجارہاہے کہ اگر انقرہ اور ریاض بغاوت کو برقرار رکھناچاہتے ہیں تو اُنہیں فوری طورپر کچھ کرناہوگا، ترکی نے اس سے قبل روس کا بمبارطیارہ بھی مارگرایا تھا اور بدستور دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی پائی جاتی ہے اور ترکی وسعودی عرب کے حالیہ اقدامات کی وجہ سے تیسری عالمی جنگ چھڑنے کا خدشہ بھی ظاہرکیاجارہاہے ۔

مزید :

بین الاقوامی -