وہ ملک جس کے ملازمین متحدہ عرب امارات سمیت مشرق وسطیٰ میں مزید کام نہیں کرسکیں گے کیونکہ ۔ ۔ ۔

وہ ملک جس کے ملازمین متحدہ عرب امارات سمیت مشرق وسطیٰ میں مزید کام نہیں ...
وہ ملک جس کے ملازمین متحدہ عرب امارات سمیت مشرق وسطیٰ میں مزید کام نہیں کرسکیں گے کیونکہ ۔ ۔ ۔

  

دبئی (مانیٹرنگ ڈیسک) دبئی میں موجود انڈونیشی قونصلیٹ نے ایک مرتبہ پھر اس بات کااعادہ کیاکہ انڈونیشی گھریلوملازمین کونوکری نہ دیں کیونکہ ان کی حکومت گزشتہ سال ہی متحدہ عرب امارات سمیت مشرق وسطیٰ میں گھریلوملازمین کے کام کرنے پر پابندی لگاچکی ہے ۔

خلیج ٹائمز کو دیے گئے انٹرویو میں انڈونیشیاءکے قونصل رجل الہدا نے بتایاکہ ’کوئی ایسا قانونی طریقہ کار موجود نہیں جوکہ انڈونیشی گھریلوملازماﺅں کو تحفظ دے سکے ، اسی وجہ سے پابندی لگائی گئی‘ تاہم یہ پابندی نئے لوگوں کیلئے ہے ، جولوگ پہلے ہی ملک میں کام کررہے ہیں ، وہ اس پابندی سے بالاتر ہیں اور بدستور کام کرسکتے ہیں‘۔

اُن کاکہناتھاکہ انڈونیشیاءکی وزارت لیبر کی طرف سے 26مئی 2015ءکو پابندی لگائی گئی تھی لیکن گزشتہ ماہ ہی تمام سفارتخانوں تک خبر پہنچ سکی۔انہوں نے بتایاکہ تاحال پابندی عائد ہے کیونکہ انڈونیشیاءکی حکومت نے ملازمین بھیجنے کی کسی درخواست پر تاحال عمل نہیں کیا۔

پابندی کے باوجود الہدا نے یہ بھی اعتراف کیاکہ انڈونیشی ملازمین کی مانگ کم نہیں ہوئی حتیٰ کہ قانونی طورپر انڈونیشی حکومت کی نظر میں یہ غیرقانونی ہے ، اب بھی آپ اشتہاردیکھ سکتے ہیں یا کسی بھی ایسی ایجنسی سے رابطہ کرسکتے ہیں جو انڈونیشی ملازمین کی خدمات فراہم کرتی ہیں ۔

مزید :

بین الاقوامی -