’میں نے اس لڑکی کا ریپ نہیں کیا بلکہ اس نے کہا تھا کہ۔۔۔‘ خاتون سے زیادتی کے الزام میں پکڑے گئے پاکستانی شہری نے عدالت میں ایسی بات کہہ دی کہ جج کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ گیا

’میں نے اس لڑکی کا ریپ نہیں کیا بلکہ اس نے کہا تھا کہ۔۔۔‘ خاتون سے زیادتی کے ...
’میں نے اس لڑکی کا ریپ نہیں کیا بلکہ اس نے کہا تھا کہ۔۔۔‘ خاتون سے زیادتی کے الزام میں پکڑے گئے پاکستانی شہری نے عدالت میں ایسی بات کہہ دی کہ جج کا بھی منہ کھلا کا کھلا رہ گیا

  

ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک)متحدہ عرب امارات میں ایک پاکستانی ٹیکسی ڈرائیور کو ایک فلپائنی خاتون کو ہراساں کرنے کے جرم میں گرفتار کیا گیا لیکن جب اسے عدالت میں پیش کیا گیا تو اس نے کمال بے شرمی کا مظاہرہ کرتے ہوئے موقف اختیار کرلیا کہ خاتون کے پاس کرایہ نہیں تھا لہٰذا کرائے کے بدلے اس کے ساتھ دست درازی کر ڈالی۔

خلیج ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق فلپائنی خاتون نے بتایا کہ اس نے ابوظہبی کے نواحی علاقے میں واقع اپنے گھر واپس جانے کے لئے ٹیکسی کرائے پر لی تھی۔ خاتون کا کہنا تھا کہ وہ پچھلی سیٹ پر بیٹھی لیکن ڈرائیور نے اسے اگلی سیٹ پر بلا لیا۔ راستے میں وہ اسے مسلسل گھورتا رہا اور پھر ایک ویران مقام پر ٹیکسی کھڑی کرکے اس کے ساتھ دست درازی شروع کردی۔ خاتون نے بتایا کہ اس نے خوفزدہ ہوکر ٹیکسی کا دروازہ کھولا اور باہر نکل کر دوڑ لگادی۔ بعدازاں اس نے پولیس کو اطلاع دی جس پر ٹیکسی ڈرائیور کو گرفتارکرلیا گیا۔

میں نے ہی اپنے دوست کو قتل کیا مگر یاد نہیں ایسا کیوں اور کب کیا : ملزم کا عدالت میں حیران کن موقف

جب ملزم کو عدالت میں پیش کیاگیا تو اس کا کہنا تھا کہ اسے یہ جان کر حیرت ہوئی کہ فلپائنی خاتون کی شکایت پراسے گرفتار کیا گیا تھا۔ اس کا موقف تھا کہ ”خاتون کے پاس کرایہ ادا کرنے کے پیسے نہیں تھے لہٰذا اس نے خود ہی اجازت دی تھی کہ میں اس کے ساتھ جو چاہوں کرلوں۔“ ملزم کے خلاف قانونی کاروائی جاری ہے اور مقدمے کی اگلی سماعت 28 فروری کو ہو گی۔

مزید :

عرب دنیا -