ائیرپورٹ پر مسافر کی لڑ کھڑاتی چال، کسٹمز اہلکاروں نے روک کر اس کی تلاشی لی تو جسم کے ایسے حصے سے دھڑا دھڑ سونا نکلنے لگا کہ دیکھ کر پولیس والوں کے بھی گال شرم سے لال ہو گئے

ائیرپورٹ پر مسافر کی لڑ کھڑاتی چال، کسٹمز اہلکاروں نے روک کر اس کی تلاشی لی ...
ائیرپورٹ پر مسافر کی لڑ کھڑاتی چال، کسٹمز اہلکاروں نے روک کر اس کی تلاشی لی تو جسم کے ایسے حصے سے دھڑا دھڑ سونا نکلنے لگا کہ دیکھ کر پولیس والوں کے بھی گال شرم سے لال ہو گئے

  

نئی دلی (نیوز ڈیسک) سمگلنگ کرنے والے قانون کی نظروں سے بچنے کے لئے نت نئے طریقے ایجاد کرتے رہتے ہیں لیکن ایک بھارتی شخص نے سونا سمگل کرنے کا ایسا بیہودہ طریقہ متعارف کروا دیا کہ جس کا تصور کر کے ہی انسان شرما جائے۔

لاہور دھماکے پر افسوس ہے ،اگر نیشنل ایکشن پلان پر عمل ہوتا تو دہشت گردی کی یہ کارروائی کبھی نہ ہوتی :عمران خان

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق اس 36 سالہ شخص کا تعلق بھارتی ریاست تامل ناڈو سے ہے اور وہ گزشتہ روز سنگا پور سے حیدر آباد کے راجیو گاندھی انٹرنیشنل ائیرپورٹ پر پہنچا تھا۔ اس کے سامان میں موجود ایل ای ڈی لیمپوں میں چھپائی گئی سونے کی 8 ٹکیاں برآمد ہونے پر اس کی اپنی تفصیلی تلاشی کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ جب اس شخص کا میٹل ڈیٹیکٹر کے ذریعے معائنہ شروع کر دیا گیا تو پتہ چلا کہ اس کے جسم کے اندر بھی سونے کی ٹکیاں موجود تھیں۔ مزید تفتیش کی گئی تو پولیس اہلکار یہ جان کر دنگ رہ گئے کہ ملزم نے سونے کی 12ٹکیاں اپنے جسم کے پچھلے حصے میں داخل کی ہوئی تھیں۔ یہ سونا برآمد کرنے کے لئے ملزم کو ٹوائلٹ لے جانا پڑا، جہاں کچھ ہی دیر میں تمام ٹکیاں برآمد ہو گئیں۔ ائیر انٹیلی جنس یونٹ کے ایک اہلکار نے بتایا کہ اس شخص سے برآمد ہونے والے سونے کی مجموعی مالیت تقریباً ایک کروڑ روپیہ ہے۔

بھارتی سمگلر عام طور پر دبئی اورسنگا پور جیسی مارکیٹوں سے سونا خریدتے ہیں، جہاں یہ قدرے سستا ہے، او ر پھر اسے چھپا کر بھارت لاتے ہیں۔کسٹمز حکام کا کہنا ہے کہ سونے کو جسم میں چھپا کر سمگل کرنے کا طریقہ پہلے بھی استعمال کیا جاتا رہا ہے لیکن جس جگہ اس ملزم نے سونا چھپایا، اس کی مثال پہلے کبھی نہیں دیکھی گئی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -