’اسلام میں شراب پینے کی اجازت ہے اگر۔۔۔‘ مصر کے مفتی نے ایسا فتویٰ جاری کردیا کہ دنیا بھر کے مسلمانوں کے منہ حیرت کے مارے کھلے کے کھلے رہ گئے

’اسلام میں شراب پینے کی اجازت ہے اگر۔۔۔‘ مصر کے مفتی نے ایسا فتویٰ جاری ...
’اسلام میں شراب پینے کی اجازت ہے اگر۔۔۔‘ مصر کے مفتی نے ایسا فتویٰ جاری کردیا کہ دنیا بھر کے مسلمانوں کے منہ حیرت کے مارے کھلے کے کھلے رہ گئے

  

قاہرہ (مانیٹرنگ ڈیسک)علماءہوں یا عام مسلمان، سب ہی جانتے ہیں کہ شراب حرام ہے، لیکن ایک مصری مفتی نے یہ کہہ کر دنیا بھر کے مسلمانوں کو حیرت میں ڈال دیا ہے کہ اگر نشہ نہ ہو تو شراب پینے میں کوئی مضائقہ نہیں۔

ویب سائٹ ایجپشن سٹریٹ کی رپورٹ کے مطابق یہ فتویٰ مصر کے مشہور مذہبی سکالر اور کونسل برائے اسلامی امور کے رکن شیخ خالد الگینڈی نے جاری کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے ”اگر ایک شخص شراب پیتا ہے اور اسے نشہ نہیں ہوتا تو یہ حرام نہیں ہے، جبکہ وہی شراب جب کوئی دوسرا شخص پیتا ہے جس پر نشہ طاری ہوجاتا ہے، تو یہ حرام ہے۔“

’سعودی عرب میں حکومت نے ہمیں یہ چیز بنانے کی اجازت دے دی ہے‘ معروف کمپنی نے بڑا اعلان کردیا، کیا چیز بنائی جارہی ہے جس کی آج تک اجازت نہ دی گئی؟ جان کر ہر کوئی دنگ رہ جائے

ڈی ایم سی ٹی وی چینل پر ایک ٹاک شو میں بات کرتے ہوئے شیخ الگینڈی نے کہا کہ نشہ حرام، گناہ اور ممنوع ہے، اور کسی شخص کو اس وقت نشے میں تصور کیا جائے گا جب وہ ایک وادی کے پیندے اور سر کا فرق بتانے سے بھی معذور ہو۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ امام ابوحنیفہ کی بھی یہی رائے ہے کہ اگر پینے والے پر نشہ طاری نہ ہوتو شراب نوشی حرام نہیں ہے۔

مزید :

عرب دنیا -