محکمہ جنگلی حیات کے افسر ان کی غیر قانونی شکار کی روک تھام یقینی بنانے کا حکم

محکمہ جنگلی حیات کے افسر ان کی غیر قانونی شکار کی روک تھام یقینی بنانے کا حکم

  

لاہور( لیڈی رپورٹر) ڈائریکٹر جنرل وائلڈ لائف اینڈ پارکس پنجاب خالد عیاض خان نے صوبہ بھر کے افسران کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے متعلقہ علاقوں میں جنگلی حیات کے تحفظ اور غیر قانونی شکار کی روک تھام کو مزید موثر بنانے کے لئے اپنے علاقے کی مقامی آبادی میں آگہی بیدارکریں۔ انہوں نے کہا کہ ذرائع ابلاغ نے آگہی مہم کو کامیاب بنانے میں ہمیشہ کلیدی کردار ادا کیا ہے، تمام افسران میڈیا نمائندگان سے قریبی رابطہ رکھیں ۔ جنگلوں اور صحراؤں میں موجودجنگلی حیات کو ان کی قدرتی آماجگاہوں کے قریب تر ماحول کی فراہمی ، تحفظ اور غیر قانونی شکار کی روک تھام کے بغیر ان کی آبادی میں اضافہ ممکن نہیں۔ انہوں نے کہا کہ تحفظ کے اس عمل میں عوام خصوصا مقامی آبادی کو شامل کیئے بغیر مطلوبہ نتائج کا حصول ممکن نہیں۔ انہوں نے کہا کہ اڑیال کی نسل کے تحفظ اور ان کی آبادی میں اضافہ کے لئے محکمہ کی طرف سے سالٹ رینج کے علاقوں میں تشکیل دی گئی پانچ کمیونٹی بیسڈ آرگنائزیشنز کے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں۔انہوں نے یہ بات صوبہ میں جنگلی حیات کے تحفظ کے انتظامات کو مزید بہتر بنانے اور محکمہ کی مجموعی کارکردگی کے جائزہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر ڈپٹی ڈائریکٹر وائلڈ لائف ہیڈ کوارٹرز محمد نعیم بھٹی، ڈپٹی ڈائریکٹر وائلڈ لائف سید ظفرالحسن، ڈپٹی ڈائریکٹر وائلڈ لائف پبلسٹی عامر مسعود، ڈائریکٹر لاہور چڑیا گھر حسن علی سکھیرا اسسٹنٹ ڈائریکٹر وائلڈلائف لاہور ریجن میاں محمد رفیق اور اسسٹنٹ ڈائریکٹرپلاننگ مدثر حسن کے علاوہ دیگر افسران بھی موجود تھے۔ انہوں نے کہا کہ سالٹ رینج میں قائم کردہ کمیونٹی بیسڈ آگنائزیشنز(سی بی اوز) کی طرز پر صوبہ کے دیگر علاقوں جہاں پرندوں اور جانوروں کی قدرتی آماجگاہیں موجود ہیں وہاں بھی ایسی سی بی اوز بنائی جائینگی ۔ ا نہوں نے کہا کہ پہلے مرحلے میں چولستان کے علاقہ میں کالے ہرن اور چنکارہ ہرن کے تحفظ اور ان کی آبای میں اضافہ کے لئے سی بی او کی تشکیل کے سلسلہ میں تقریبا 80 فیصد سے زائد کام مکمل کر لیا ہے۔ خالد عیاض خان نے اجلاس کو بتایا کہ صوبہ بھر میں غیر قانونی شکاریوں کے خلاف جاری مہم اور دیگر مدات میں 2014-15 کے دوران صرف 4کروڑ 60لاکھ روپے ریونیو حاصل کیا گیا تھا مگر اس تمام نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنے اور اس میں انقلابی تبدیلیاں لانے سے نمایاں بہتری آئی ہے اور اب 2016-17 میں یہ ریونیو بڑھ کر 7کروڑ 40لاکھ روپے تک جا پہنچا ہے۔

خالد عیاض

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -