قصور ویڈیو سکینڈل ، ملزمان کی بریت کے خلاف حکومت ہائیکورٹ میں اپیل

قصور ویڈیو سکینڈل ، ملزمان کی بریت کے خلاف حکومت ہائیکورٹ میں اپیل

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )قصور ویڈیو سکینڈل کے دس ملزمان کی بریت کے خلاف سرکار نے لاہور ہائیکورٹ میں اپیل دائر کر دی ہیں۔یہ اپیل ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل پنجاب خرم خان کی وساطت سے دائر کی گئی ہے ۔اپیل میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ دہشت گردی اور سیشن عدالتوں نے ملزمان کو ثبوت اور ویڈیوز موجود ہونے کے باوجود بری کر دیا،اپیل میں کہا گیا ہے کہ ملزمان کے خلاف تھانہ گنڈا سنگھ میں بداخلاقی اور ویڈیوز بنا کر بچوں کو بلیک میل کرنے کے متعدد مقدمات درج کئے گئے،اپیل میں کہا گیا ہے کہ بداخلاقی کے سکینڈل سے دنیا بھر میں ملک کی بدنامی ہوئی ،ٹھوس شہادتوں کے باوجود ملزمان کو بری کرنے سے متعلق ماتحت عدالت کے فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے، ملزمان حسیم عامر،فیضان مجید،رمضان عرف جانا ہندو،علیم آصف،وسیم عابد،یحییٰ،تنزیل الرحمن،علی مجید،عتیق الرحمن اور سلیم اختر شیرازی کے خلاف اپیلیں دائر کی گئی ہیں۔

قصور سکینڈل

مزید :

علاقائی -