نماز جنازہ میں عورت کی شرکت ممنوع نہیں ، مردوں کے برابر کھڑی نہیں ہو سکتی : علما ئے کرام

نماز جنازہ میں عورت کی شرکت ممنوع نہیں ، مردوں کے برابر کھڑی نہیں ہو سکتی : ...

  

لاہور (جاوید اقبال)کیا خواتین نماز جنازہ میں شرکت کر سکتی ہیں اس حوالے سے مفتی ڈاکٹر راغب نعیمی نے کہا ہے کہ نماز جنازہ میں عورت کی شرکت شرعی طور پر ممنوع نہیں ہے مگر مردوں کے برابر صف میں کھڑے ہو کر نماز پڑھنے کی بھی اجازت نہیں ہے ۔روزنامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو میں انہوں نے کہا کہ عام نماز میں عورت کہا مرد کے برابر کھڑے ہو کر نماز پڑھنا بھی جائز نہیں ہے ۔عورت نماز جنازہ میں شرکت کرنا چاہے تو شرعی طریقہ یہی ہے کہ وہ مردوں کے پیچھے صف میں کھڑی ہو سکتی ہے اور یہ فرض کفایہ ہے واجب نہیں ہے شرکت کرلی جا ئے تو ثواب ہے نہ کریں تو گناہ نہیں ہے۔مذہبی سکالر فاروق حیدر مودودی نے کہا ہے کہ نماز جنازہ مغفرت کہ دعا ہے اس میں عورت کی شرکت کی ممنوعیت نہیں ہے ۔عاصمہ جہانگیر کے جنازہ میں شرکت کرنیوالی عورتوں کو میں نے مردوں کے برابر صفوں میں کھڑا نہیں ہونے دیا انہوں نے میری ہدایت پر پچھلی صفوں میں کھڑے ہو کر نماز جنازہ ادا کی انہوں نے کہا کہ جب عورت حرم میں مرد کیساتھ داخل ہو سکتی ہے مردوں کے قبرستان میں دفن ہو سکتی ہے تو نماز جنازہ میں شرکت کیوں نہیں کر سکتی۔بعض علمائے دین جن کی دین اور شر ع کے بارے میں علم ناقص ہے وہ اس کو ایشو بنا رہے ہیں ۔دارلعلوم عبیدیہ ملتان کے صدر مولا ناعبد القوی نے کہا ہے نماز جنازہ مرد اور عورت دونوں کیلئے فرض کفایہ ہے ۔جس طرح حصول علم مرد اور عورت پر فرض ہے اسی طرح جنازہ میں مرد اور عورت ایک ساتھ شرکت کر سکتے ہیں ایسا کرنے سے شریعت نہیں روکتی نہیں ہے تاہم ٹھیک طریقہ یہ ہے عام نماز کی طرح نمازہ جنازہ میں بھی شرکت کرنے والی عورتیں صف مردوں کے پیچھے الگ تھلگ کھڑی ہوں ۔ لاہور گیریژن یونیورسٹی کے شعبہ علوم اسلامیہ کے چیئر مین ڈاکڑ سعید احمد سعیدی نے کہا ہے کہ عام نماز کی کی طرح نماز جنازہ میں کے برابر صف میں عورت کھڑی نہیں ہو سکتی اگر ایسا ہوتا ہے تو دونوں کی نماز نہیں ہو تی بلکہ ٹوٹ جاتی ہے نماز کی صفوں کی ترتیب میں عورت چوتھی صف میں کھڑی ہو سکتی ہے ۔نماز کیلئے صف بندی کی ترتیب کے بارے میں شرع کا حکم یہ ہے کہ پہلی صف میں بڑے عمر کے لوگ دوسری صف بچوں کی تیسری صف خنشیا (ہیجڑے)اور چوتھی عورت کی صف ہوتی ہے اور یہی ترتیب نماز جنازہ میں بھی اپنانی چاہیے عورت کیلئے پردے کا حکم ہے اور اگر عورتیں کو نماز جنازہ میں شرکت کرنا مقصود ہو تو یہ ممنوع نہیں ہے لیکن پردہ ضروری ہے اگر عورتیں صف میں مرد کے برابر کھڑی ہو جا تی ہیں تو ایسی صورت میں دونوں کی نماز نہیں ہوتی ٹوٹ جا تی ہے اگر عاصمہ جہانگیر کے جنازے میں ایسا ہوا ہے تو یہ شر عا جائز نہیں ہے ۔

مزید :

صفحہ اول -