شیدو میں ڈینٹل ایسوسی ایشن کی صوبائی کابینہ کا ہنگامی اجلاس

شیدو میں ڈینٹل ایسوسی ایشن کی صوبائی کابینہ کا ہنگامی اجلاس

  

شیدو( نمائندہ پاکستان)ایچ سی سی کی جانب سے غیر قانونی چھاپوں کے خلاف ڈینٹل ایسوسی ایشن کی صوبائی کابینہ کا ہنگامی اجلاس ہوا جس میں وزیر اعلیٰ اور ہیلتھ سیکرٹری کے واضع احکامات کے باوجود انسپکٹر رئیس جان کا نوشہرہ میں ڈینٹل کلینکوں پر چھاپے اور کلینکوں میں تھوڑ پھوڑ کرنے اور باعزت ڈاکٹروں کی بے عزتی کے واقعے کی مزمت کی گئی اور ایچ سی سی کے انسپکٹر رئیس جان کے خلاف بھر پور احتجاج اور عدالت جانے کے لئے لائحہ عمل طے کیا گیا اجلاس میں متفقہ طور پر ایک قرار داد منظور کی گئی جس میں حکومت سے مطالبہ کیا گیا کہ خیبر پختونخوا ڈینٹل ایسوسی ایشن اپنے لئے قانون سازی کی جنگ ایک پر امن طریقے سے لڑ رہی ہے اور جب تک ڈینٹل ٹیکنیشن اور ڈینٹل پروفیشنلز کے لئے باقاعدہ طور پر قانونی سازی اور رجسٹریشن کے لئے طریقہ کار نہیں بنایا جاتا اس وقت تک ایچ سی سی ہمارے ممبران کے کلینکس پر غیر قانونی چھاپوں اور اسے سیل کرنے سے گریز کرے اور اگر ایچ سی سی کی جانب سے بغیر قانون سازی کے غیر قانی چھاپوں کا سلسلہ بند نہیں کیا گیا تو صوبہ بھر کے ڈینٹل ٹیکنیشن ایسوسی ایشن ایچ سی سی کے خلاف نہ صرف بھر پور احتجاج کریگی بلکہ عدالت کا دروازہ بھی کٹھ کٹھائے گی اس موقع پر ڈینٹل ایسوسی ایشن کی صوبائی کابینہ کے ارکان عمران فضل ،انور شہزاد،حاجی فیضل الغنی،شاہد خان،آصف خان،عبدالغیاث،اور حاجی فضل ربی بھی موجود تھے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -