مردان میڈیکل کمپلیکس میں آپریشن کے دوران جاں بحق شخص کا تنازعہ حل

مردان میڈیکل کمپلیکس میں آپریشن کے دوران جاں بحق شخص کا تنازعہ حل

  

مردان (بیورورپورٹ) ضلع نائب ناظم اسد علی ،تحصیل نائب ناظم مشتاق سیماب،ڈسٹرکٹ پولیس پبلک سیفٹی کمیشن کے چےئرمین عبد العزیز خان اوراے این پی سعودی عرب کے جنرل سیکرٹری سبز علی کی کوششوں سے مردان میڈیکل کمپلیکس میں آپریشن کے دوران جاں بحق ہونے والے گوجر گڑھی کے رہائشی شبیر احمد کے اہلحانہ ،ضلع ناظم حمایت مایار اورڈاکٹروں کے مابین تنازعہ حل ہو گیا۔اس حوالے سے ایک خصوصی تقریب کا اہتمام کیا گیا جس میں فریقین نے ایک دوسرے کو معاف کر کے آپس میں بغل گیر ہوگئے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے تحصیل نائب ناظم مشتاق سیماب نے کہا کہ اداروں کے درمیان بہتر کواڈینیشن وقت کا تقاضا ہے اور سب کو مل کر اداروں کے تحفظ اور اس پر عوامی اعتماد کی بحالی کے لئے کام کرنا چاہےئے۔انہوں نے کہاکہ فریقین کے مابین بعض غلط فہمیوں کی وجہ سے دوریاں پیدا ہوئی تھی لیکن جرگہ ممبران کی کوششوں سے فریقین کے مابین دوریاں ختم ہو گئی ہے ۔انہوں نے ڈاکٹروں پر زور دیتے ہوئے کہاکہ انسانیت کی خدمت میں کوئی کسر اٹھا نہ رکھیں اور لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ریلیف پہنچانے کے لئے اپنی تمام تر وسائل کو بروئے کار لائیں۔انہوں نے کہاکہ بعض اوقات معمولی تلخیاں بڑھ کر کسی بڑے حادثے کا سبب بن جاتی ہے۔اس موقع پر ضلع ناظم حمایت اللہ مایار نے گوجر گڑھی کے رہائشی شبیر احمد کے اہلحانہ کے لئے ضلع کونسل کی جانب سے پانچ لاکھ روپے کے مالی امداد کا اعلان بھی کیا۔تقریب میں مردان میڈیکل کمپلیکس کے ہاسپیٹل ڈائریکٹر ڈاکٹر طارق محمود،میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر مختیار علی،ڈپٹی ڈائریکٹر ڈاکٹر جاوید اقبال،ینگ ڈاکٹرز کے ڈاکٹر آیاز، پیرامیڈیکس کے صدر تاج محمد،ایپکا کے صوبائی صدر اورنگزیب کشمیری،گوجر گڑھی سے تعلق رکھنے والے ضلع کونسل کے رکن شیر غالب،محمد فیاض خان،منصور خان،اے این پی کے ضلعی جنرل سیکرٹری لطیف الرحمان،صوبائی نائب صدر جاوید خان،تحصیل صدر سید عالم بابا اور دیگر نے شرکت کی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -