کرشنا مندر کیلئے اسلام آباد میں جگہ الاٹ کرنے کا فیصلہ

کرشنا مندر کیلئے اسلام آباد میں جگہ الاٹ کرنے کا فیصلہ
کرشنا مندر کیلئے اسلام آباد میں جگہ الاٹ کرنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) وفاقی حکومت نے اسلام آباد میں پہلے کرشنا مندر کی تعمیر کیلئے اسلام آباد ہندو پنچائت کو چار کنال زمین الاٹ کرنے کا فیصلہ کرلیا ،اسلام آباد کے سب سے مہنگے ایچ نائن سیکٹر میں چار کنال کے رقبے پر کرشنا مندر ،شمشان گھاٹ اور ہندو کمیونٹی سنٹر کیلئے جگہ فراہم کرنیکی منظوری دیدی گئی۔

روزنامہ ایکسپریس کے مطابق اسلام آباد میں بسنے والی ہندو کمیونٹی نے وفاقی حکومت کو تحریری طور پر آگاہ کیا ہے ہندو مذہب سے تعلق رکھنے والے افراد کو اپنی مذہبی رسومات کی ادائیگی کیلئے ملک کے مختلف شہروں میں جانا پڑ تا ہے جس سے سکیورٹی سمیت دیگر مسا ئل کا سامنا ہے۔لہٰذا وفاقی دارا لحکومت میں بین الاقوامی معیار کے مندر کی تعمیر کیلئے فنڈز جگہ اور مالی معاونت فراہم کی جائے۔

اس حوالے سے سی ڈی اے نے ایچ نائن میں چار کنال کے رقبے پر کرشنا مندر کی تعمیر کے حوالے سے اسلام آباد ہندوپنچائت کو جگہ فراہم کرنیکا فیصلہ کرلیا ،اسلام آباد ہندو پنچائت کے صدر پریمتم داس نے کہا کہ ہم موجودہ حکومت کے بے حد مشکور ہیں کہ ہمیں مندر کی تعمیر کی اجازت دی گئی۔ایکسپریس سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ مندر کی تعمیر کے سلسلے میں سی ڈی اے کے حکام نے جگہ الاٹ کردی ہے لیکن تاحال جگہ پوزیشن نہیں دی۔ہم وزیر اعظم سے اپیل کرتے ہیں کہ مندر کی تعمیر کیلئے سرکاری طور پر فنڈز جاری کیے جائیں۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -رئیل سٹیٹ -