حج معاملات میں کابینہ کمیٹی رکاوٹ نہیں،عدالت جب حکم دے قرعہ اندازی کروادینگے:سردارمحمد یوسف

حج معاملات میں کابینہ کمیٹی رکاوٹ نہیں،عدالت جب حکم دے قرعہ اندازی ...
حج معاملات میں کابینہ کمیٹی رکاوٹ نہیں،عدالت جب حکم دے قرعہ اندازی کروادینگے:سردارمحمد یوسف

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر مذہبی امور سردار محمد یوسف نے کہا ہے کہ حج قرعہ اندازی مختلف عدالتوں کی جانب سے سٹے آرڈرز کی وجہ سے موخر کرنی پڑی،عدالت جب حکم دے گی قرعہ اندازی کروا دینگے،حج معاملات میں کابینہ کمیٹی کی طرف سے کوئی رکاوٹ نہیں، اگر اضافی کوٹہ ملا تو وہ پرائیوٹ کمپنیوں کود یاجائے گا۔

 اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سعودی عرب نے حج کوٹہ میں 5 ہزار اضافہ کیا ہے، سعودی عرب کی جانب سے حج سے متعلق تمام امور وہاں کی حج سپریم کونسل دیکھتی ہے ،وزیراعظم نے آبادی کے اضافے کو مدنظر رکھتے ہوئے سعودی ولی عہد کو خط لکھا ہے جس کاجواب آنا باقی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ حج کا پیسہ شریعہ اکاؤنٹس میں جمع ہوں گے اور شریعہ اکاونٹ رکھنے والے بینکوں کو ہی پیسے وصول کرنے کی اجازت ہو گی۔حج کرپشن سے متعلق گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھاکہ اب حج کے معاملات میں کرپشن کا امکان نہیں،2012 کے بعد سے کوئی ٹور کمپنی رجسٹررڈ نہیں ہوئی جتنی کمپنیاں ہیں وہ 2012 سے پہلے سے کام کررہے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ موجود حکومت کی پالیسیوں کی بدولت حج اخراجات میں واضح طور پر کمی آئی ہے،حکومت کی طرف سے 1 لاکھ 80 ہزار حج کوٹہ مختص ہے، اگر اضافی کوٹہ ملا تو وہ پرائیوٹ کمپنیوں کود یاجائے گا،پہلے تقریباََ3 لاکھ20 ہزار اخراجات آتے تھے ، اب ڈھائی لاکھ میں خرچ آتا ہے۔کابینہ کمیٹی کی طرف سے رکاوٹ سے متعلق سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھاکہ حج معاملات میں کابینہ کمیٹی کی طرف سے کوئی رکاوٹ نہیں۔

مزید :

قومی -