بھارت عالمی سطح پر بدنام ہو چکا، پلو امہ جیسا ڈرامہ دوبارہ رچانے کی تیاریا ں

بھارت عالمی سطح پر بدنام ہو چکا، پلو امہ جیسا ڈرامہ دوبارہ رچانے کی تیاریا ں

  



سرینگر (مانیٹرنگ ڈیسک) کشمیرمیڈیا سروس نے خبردارکیا ہے کہ بھارت پلوامہ کی طرز کا ایک اور ڈرامہ رچا سکتا ہے تاکہ مقبوضہ کشمیرکے مؤقف پر پاکستانی کوششوں کونقصان پہنچایا جاسکے۔پلوامہ واقعہ کو ایک سال مکمل ہونے پر اپنی رپورٹ میں کشمیرمیڈیا سروس نے انکشاف کیا ہے کہ بھارت کشمیرکی جدوجہد آزادی کو دبانے اورپاکستان کو بدنام کرنے کیلئے ایک اورفالس فلیگ آپریشن کرسکتا ہے۔ پلوامہ کا ڈرامہ دنیا کو اس لیے دکھایا گیا تاکہ یہ ثابت کیا جاسکے کہ کشمیرمیں جدوجہدآزادی نہیں بلکہ دہشتگردی ہورہی ہے۔ماہرین کا کہنا ہے کہ پلوامہ حملے کی آڑ نہ صرف مودی سرکارکو کامیاب کروانے کاباعث بنی بلکہ اس کے بعد مقبوضہ وادی کی خصوصی حیثیت کا بھی خاتمہ کیا گیا۔رپورٹ میں اعتراف کیا گیا ہے کہ پلوامہ واقعہ کے بعد بھارتی دراندازی، پائلٹ کی گرفتاری اورپھرواپسی نے پاکستان کو اخلاقی فتح دلائی۔ بھارتی خفیہ ایجنسیاں جنوبی ایشیا میں جنگ جیسی صورتحال پیدا کرنے کے لیے پارلیمنٹ، اڑی اور پلوامہ جیسے حملوں میں ملوث تھیں۔ بھارت نے کشمیریوں کی زمین اور جائیدادوں پر قبضہ کرنے کا منصوبہ تیار کر لیا، مودی سرکار نے 6 ہزارایکڑ زمین بھارتی اور عالمی سرمایہ کاروں کو دینے کا فیصلہ کیا ہے۔بھارت اپریل یا مئی میں مقبوضہ وادی میں عالمی بزنس کانفرنس بھی منعقد کروائے گا جس میں باضابطہ طور پر کشمیریوں کی زمینیں سرمایہ کاروں کو دی جائیں گی۔ مقبوضہ وادی میں نجی کمپنیوں کو فول پروف سکیورٹی، انشورنس اور ٹیکس سے استثنیٰ دیا جائے گا، مقامی کشمیری اخبارکے مطابق 250کمپنیاں مقبوضہ کشمیرمیں سرمایہ کاری کریں گی۔

پلوامہ ڈرامہ

مزید : علاقائی