پولیس اہلکاروں کے لیے سوشل میڈیا پالیسی جاری

پولیس اہلکاروں کے لیے سوشل میڈیا پالیسی جاری

  



لاہور (کرائم رپورٹر)پولیس فورس کے لیے میڈیا پالیسی کے بعد سوشل میڈیا پالیسی بھی جاری کردی گئی۔پولیس فورس کے افسران واہلکار نجی اکاؤنٹس پر وردی والی تصویر، گاڑی اور بیجز سمیت پولیس کے متعلقہ کسی چیزکواستعمال نہیں کریں گے جبکہ ذاتی کسی بھی ڈیوائس میں سرکاری کاغذات کی کاپی بھی سکین نہیں کرسکیں گے۔تفصیلات کے مطابق پنجاب پولیس فورس کوسوشل میڈیاکیاستعمال کے حوالے سے پالیسی جاری کردی گئی ہے۔آئی جی پنجاب کے حکم پرپولیس فورس کیلئے سوشل میڈیاپالیسی تمام یونٹس کو عملدرامد کیلیے بھجوادی گئی ہے۔ادرے کی پرائیویسی اور وقار کو بحال رکھنے کے لیے افسران و اہلکاروں کے اس پر عملدرآمد کو یقینی بنانے کا حکم دیا گیا۔ پالیسی کے مطابق افسران اور اہلکار سرکاری معلومات ذاتی ڈیوائس میں سکین نہیں کرسکتے، تصویر سمیت دیگر اشیاء بھی کمپیوٹر میں محفوظ نہیں رکھ سکتے، پنجاب پولیس کوذاتی حیثیت میں سوشل نیٹ ورکنگ کیلئے بھی ہدایات جاری کی گئی ہیں کہ سماجی رابطے کیلئے کسی بھی پلیٹ فارم پر باوردی پروفائل تصویر نہیں لگائی جائیگی۔

سوشل میڈیا پر کوئی افسر یا اہلکار اپنا عہدہ بھی ظاہر نہیں کریگا۔ کسی ادارے کی خدمات کیلئے افسران ممبرکی حیثیت سیبھی عہدہ استعمال نہیں کریں گے۔ افسران نام، بیج، لوگو یا گشت والی گاڑی کوسوشل میڈیا پر استعمال نہیں کریں گے، فوٹوگرافی، آڈیو، ویڈیو یا کسی بھی ملٹی میڈیا فائل سے متعلق تصویر شائع نہیں کریں گے۔تمام افسران اپنے اکاؤنٹس کی پرائیویسی سیٹنگ لگائیں، ذاتی سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر سیاسی معاملات پر بات سے گریز کریں۔یاد رہے کہ سابق آئی جی پنجاب کی جانب سے میڈیا پالیسی بھی جاری کی گئی تھی جس پرصحافتی حلقوں اور سول سوسائٹی کی جانب سے کافی مزاحمت کا سامنا کرنا پڑاتھا۔

مزید : علاقائی