وکلاء کے ساتھ تلخ کلامی، ایڈیشنل سیشن جج کی معذرت

وکلاء کے ساتھ تلخ کلامی، ایڈیشنل سیشن جج کی معذرت

  



لاہور(نامہ نگار)لاہور کے ایڈیشنل سیشن جج معین کھوکھر نے وکلاء کے ساتھ تلخ کلامی کرنے اور ساتھی ججز کو مس گائیڈ کر کے ہڑتال کروانے پر لاہور بارایسوسی ایشن کے نائب صدر اوردیگر عہدیداروں سے معذرت کرلی۔ضمانت کی درخواست کی سماعت کے دوران لاہور بار کے نائب صدر کرم نظام راں اور ایڈیشنل سیشن جج معین کھوکھر کی تلخ کلامی ہوئی،ایڈیشنل سیشن جج معین کھوکھر نے لڑائی جھگڑے کے مقدمے میں دلائل سننے کے بعد درخواست مسترد کر دی تھی، وکلاء نے اعتراض کیا کہ لڑائی جھگڑے کے قابل ضمانت جرم میں کیسے ضمانت مسترد کی جا سکتی ہے۔جس پر فاضل جج نے مبینہ طور پرغصے سے کرسی ایک سائیڈ پر پھینکی اور کہا کہ جو بھی ہے، ضمانت عدالت کا صوابدیدی اختیار ہے، وکلاء کے احتجاج سیشن جج لاہور قیصر نذیر بٹ کے سامنے عدالت کاررروائی کی فوٹیج چلائی گئی،بعدازاں معاملہ رفع دفع ہونے کے بعد وکلا نے ہڑتال ختم کردی، لاہور بار ایسوسی ایشن کے نائب صدر کرم نظام راں نے گفتگو کرتے ہوئے کہاہے میرا کسی جج سے ذاتی مسئلہ نہیں، صرف معاملے کی انکوائری چاہتا تھا،سچ کی جیت ہوئی ہے۔

مزید : علاقائی