مضر صحت مٹھائیاں بنانے والوں کیخلاف کریک ڈاؤن، 4من تیار مال تلف

مضر صحت مٹھائیاں بنانے والوں کیخلاف کریک ڈاؤن، 4من تیار مال تلف

  



لاہور(جنرل رپورٹر)اونچی دوکانوں کے پھیکے پکوان بے نقاب۔۔۔ڈائریکٹر جنرل پنجاب فوڈ اتھارٹی عرفان میمن کی سربراہی میں مضر صحت مٹھائی تیار کرنے والوں کے خلاف کارروائیوں میں مضر صحت اجزاء کے استعمال پرایک پروڈکشن یونٹ کو سیل کردیا۔غیر معیاری انتظامات پر4بیکرز اینڈ فوڈ پوائنٹس کو بھاری جرمانے عائد کیے گئے۔ تفصیلات کے مطابق فوڈ سیفٹی ٹیم نے کچا جیل روڈ پر کارروائی کرتے ہوئے معروف فضل سویٹس اینڈ بیکرز کا پروڈکشن یونٹ سیل کردیا۔اسی طرح سابقہ ہدایات کی خلاف ورزی پر سمن آباد میں کشمیر بیکری بریڈ اور نیو کشمیر بیکرز کو بھاری جرمانے عائد کیے۔مزید برآں جوئے شاہ روڈ پر سلیم پھیونیاں والے اور سمسانی روڈ پر گلو سویٹس کو بھی جرمانہ کیا گیا۔ڈی جی فوڈ اتھارٹی کا کہنا تھا کہ بیکری پروڈکٹس کی تیاری میں ناقص کریم، چیز اور ممنوعہ کھلے رنگوں کا استعمال کیا جا رہا تھا۔استعمال شدہ گندے آئل کی موجودگی، ورکرز کے میڈیکلز اور خام مال کا ریکارڈ بھی عدم موجود پایا گیا۔علاوہ ازیں کارروائیوں کے دوران چوہوں اور چھپکلیوں کی بھرمارپر4من ناقص مٹھائی کو تلف کردیا گیا۔عرفان میمن کا مزید کہنا تھا کہ زنگ آلود برتنوں کے استعمال اور صفائی کے انتہائی ناقص انتظامات جرمانے عائد کیے گئے۔انہوں نے واضح کیا کہ غیر معیاری ناقص اشیاء کا خوراک کی تیاری میں استعمال متعدد بیماریوں کا سبب بنتاہے۔ عوام سے گزارش ہے کہ کسی بھی فوڈ پوائنٹ پرغیر معیاری اشیاء خورونوش کی موجودگی پر ہمیں اطلاع دیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1