ایل ٹی سی کے روٹس بند ہونے سے شہری سفری سہولیات سے محروم

ایل ٹی سی کے روٹس بند ہونے سے شہری سفری سہولیات سے محروم

  



لاہور(سروے رپورٹ: دیبا مرزا : تصا ویر: ند یم احمد)صو با ئی دا رالحکو مت کے سرحدی علا قہ جلو موڑکے شہریو ں کو ٹرانسپو رٹ کے حوالے سے شدید مسا ئل کا سامنا ہے محکمہ ٹرانسپو رٹ کی ہٹ دھر می اور غلط فیصلو ں نے شہریو ں سے سفری سہو لیات چھین لیں جس کی وجہ سے پرا ئیویٹ ٹرانسپو رٹ ما فیا بے لگا م،شہری سراپا احتجا ج بن گئے۔شہریو ں نے مطا لبہ کیا ہے کہ وزیر ٹرانسپو رٹ فوری طو ر پر 22نمبر ویگنوں کا روٹ بحال کریں ،بے ہنگم(مزدوں) کو بند کیا جائے۔تفصیلا ت کے مطا بق لاہور بھر میں ٹرا نسپو رٹ کا مسئلہ شدت اختیا ر کر گیا ہے۔واضح رہے کہ پچھلے چند ما ہ پہلے گو رنمنٹ کی جانب سے ایل ٹی سی کے روٹس کو بند کر دیا گیا تھا جس کی وجہ سے شہریو ں کو پریشا نی کا سا منا کر نا پڑ رہا ہے اور کچھ عرصہ کے بعد ہی گو رنمنٹ نے خودسا ختہ فیصلے سے سے مقا می مزدا روٹس کو چلا دیا گیا جس کی و جہ سے شہریو ں کو آسا نی ملنے کے بجا ئے مشکلا ت مزید بڑھ گئی ہیں۔ اس حو الے سے گز شتہ روز روزنا مہ ”پا کستان “کی جا نب سے سرحدی علا قہ جلو مو ڑ کا سروے کیا گیا۔سروے کے دوران شہریو ں نے گفتگو کر تے ہو ئے بتا یا کہ ہما را علا قہ چو نکہ پسما ندہ علا قوں میں شما ر ہو تا ہے اس لئے ہما رے لئے گو رنمنٹ ٹرانسپو رٹ بڑی اہمیت رکھتی ہے۔ انہو ں نے کہا کہ ہم سب غریب لو گ ہیں دو وقت کا کھا نا کھا نا ہی مشکل ہے تو پرا ئیویٹ ٹرا نسپو رٹ تو استعما ل کر نا ہما رے لئے ممکن نہیں۔ شہری محمد افضل، محمد احسا ن، کا شف علی، فیصل، مصطفی، نذیرا ں بی بی، نصرت، ثریا بی بی نے کہا کہ مو جو دہ حکو مت نے تو غریب آد می کا جینا حرا م کر رکھا ہے انہو ں نے کہا کہ جب سے یہ حکو مت آئی ہے مہنگا ئی کے تما م ریکا رڈ ٹو ٹ گئے ہیں۔ انہو ں نے کہا کہ ہم لو گو ں کو ٹرا نسپو رٹ کے حوا لے سے شد ید مسا ئل کا سا منا ہے پہلے تو ایل ٹی سی کی بسیں چلتی تھیں تو ہم با آسا نی سفر کر لیتے تھے اب حکو مت نے ہم سے سفر کا یہ ذ ریعہ بھی چھین لیا ہے انہو ں نے کہا کہ ان روٹس کو اگر بسو ں کو بند ہی کر نا تھا تو اس کے متبا دل نئی بسیں چلا تے تا کہ ہم کو متبا دل ذریعہ مل سکے۔ انہو ں نے کہا کہ حکو مت نے اب جو مزدے چلا ئے ہیں ان پر بزرگو ں اور خوا تین کے لئے سفر کر نا بہت مشکل ہے۔اور ان کا کو ئی ٹا ئم شیڈول بھی نہیں ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1