اردوان نے ارض فلسطین اور کشمیری کی بات کر کے حق دوستی ادا کر دیا: سرا ج الحق

اردوان نے ارض فلسطین اور کشمیری کی بات کر کے حق دوستی ادا کر دیا: سرا ج الحق

  



اسلام آباد (آئی این پی)جماعت اسلامی کے امیرو سینٹر سراج الحق نے کہاکہ ترکی کے صدر طیب اردوان نڈر اور بے باک عظیم مدبر ہیں، انہوں نے کھل کر مسئلہ کشمیر، فلسطین پر بات کی اور امریکہ اسرائیل کے گٹھ جوڑ کو بے نقاب کیا، وزیر اعظم نے مولانا فضل الرحمن کے خلاف آرٹیکل سکس کے نفاذ کی بات کی ہے اگرآرٹیکل سکس سیاستدانوں پر لگنا شروع ہو ا تو پھر بات ان کی ذات کی طرف بھی جائے گی، فوج کو غیر جانبدار رہنے دیا جائے اسے پارٹی نہ بنائیں۔ جمعہ کو پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے کہاطیب اردوان کی تقریر نے مظلوم کشمیریوں کو نیا عزم اور حوصلہ بخشا ہے۔ انہوں نے ارض فلسطین اور کشمیر کی بات کر کے حق دوستی ادا کیا ہے۔ ترک صدر نے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کے دوران بھارت پر واضح کر دیا ہے کہ مسئلہ کشمیر پر پاکستان اور ترکی کا موقف ایک ہے۔جبکہ ڈونلڈ ٹرمپ کو بھی دو ٹوک جواب دیا ہے۔ ترک صدر کی اپنے ساتھ سرمایہ کاروں اور صنعتکاروں کے وفود لاکر پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے اورملکی معیشت کو سنبھالا دینے کی کوشش قابل ستائش ہے۔انہوں نے کہا کہ ایک طرف طیب اردگان نے اتحاد و یکجہتی پر زور دیا اور دوسری طرف ہماری حکومت نے قومی قیادت اور پارٹی قائدین کو طیب اردوان سے ملنے کا موقع نہ دیکر تعصب اور تنگ نظری کا مظاہرہ کیاحالانکہ یہ قومی روایت ہے کہ پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے بعد معزز مہمان سے قومی قائدین اور پارٹی قیادت کا باقاعدہ تعارف اور مصافحہ کرایاجاتا ہے شائدحکومت کو خطرہ تھا کہ کوئی اس کی نااہلی اور کرپشن کو بے نقاب نہ کردے۔دریں اثناسراج الحق نے نائب امیر جماعت اسلامی بنگلا دیش اور سابق رکن پارلیمنٹ مولانا عبد السبحان کی دوران قید شہادت پر تعزیت کرتے ہوئے ان کی مغفرت اور ان کے خاندان سمیت جماعت اسلامی کے کارکنان کے ساتھ گہری ہمدردی کا اظہارکیا ہے اور ان کیلئے صبر و استقامت کی دعا کی ہے۔

سراج الحق

مزید : صفحہ آخر