رحیم یار خان‘ دوشیزہ کو پرائیویٹ ہسپتال سے اغوا کرنیکی کوشش

  رحیم یار خان‘ دوشیزہ کو پرائیویٹ ہسپتال سے اغوا کرنیکی کوشش

  



رحیم یار خان (بیورورپورٹ)مقامی ہسپتال میں والدہ کے علاج معالجہ کیلئے آئی ہوئی 15سالہ دوشیزہ کو ڈاکٹر کے دو ملازموں نے نشہ آور انجکشن لگاکر نیم بیہوشی کی حالت میں اغوا کرنے کی کوشش رشتہ داروں نے ناکام بنادی تفصیل کے مطابق خان گڑھ ضلع گھوٹکی سندھ کے رہائشی حاجی چندن عرف عبدالعزیز نے پولیس تھانہ سٹی اے ڈویژن کو اپنی تحریری شکایت میں (بقیہ نمبر43صفحہ7پر)

بیان کیا کہ اپنی زوجہ کے علاج معالجہ کیلئے ہسپتال روڈ پر ہسپتال آئے ہوئے تھے جہاں اپنی والدہ کے ہمراہ موجود اس کی 15سالہ بیٹی مریم بی بی بھی موجود تھی کہ اسی دوران ڈاکٹر نے دو نامعلوم ملزمان کی مدد سے اس کی 15سالہ بیٹی مریم بی بی کو نشہ آور ادویات دیدیں جس کے نتیجہ میں وہ نیم بیہوش ہوگئی۔ ڈاکٹر سمیت تینوں ملزمان نے اسے زبردستی ہسپتال سے اغوا کرنے کی کوشش کی۔ بیدار ہونے پر شور واویلا شروع کردیا جس پر اس کے قریبی رشتہ داروں کو نزدیک آتا دیکھ کر ملزمان اس کی بیٹی مریم بی بی کو چھوڑ کر موقع سے فرارہوگئے۔ اطلاع پاکر پولیس موقع پر پہنچی۔ واردات بارے حقائق سامنے آنے پر والد حاجی چندن عرف عبدالعزیز کی مدعیت میں پولیس نے مقدمہ درج کرکے کاررو ائی شروع کردی۔رابطہ کرنے پر ڈاکٹر کا موبائل بند پایا گیا۔

کوشش

مزید : ملتان صفحہ آخر