کوھاٹ میں بغیر نمبر پلیٹ رکشوں کی بھرمار‘ اقدامات کا مطالبہ

کوھاٹ میں بغیر نمبر پلیٹ رکشوں کی بھرمار‘ اقدامات کا مطالبہ

  



 کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوھاٹ میں بغیر نمبر پلیٹ رکشوں کی بھرمار‘ ٹریفک وارڈنز کی بھاری بھر کم جرمانوں کے باوجود مثبت نتائج برآمد نہ ہو سکے اس سلسلے میں مصدقہ ذرائع نے بتایا کہ کوھاٹ میں اس وقت چار ہزار کے قریب رکشے رجسٹرڈ نہیں اور بغیر نمبر پلیٹ کے سڑکوں پر دوڑتے نظر آتے ہیں تاہم ٹریفک واڈنز نے بھی چھریاں تیز کر کے 5 ہزار روپے تک جرمانے عائد کرنا شروع کر دیئے ہیں مگر حالات پھر بھی جوں کے توں ہیں اس حوالے سے جب رکشہ مالکان سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے 5 ہزار جرمانے کو ان سے رزق حلال چھیننے کے مترادف قرار دیا جن کی ادائیگی ان کے بس میں نہیں نمبر پلیٹ کے حصول بارے رکشہ ڈرائیوران کا کہنا ہے کہ ہم موٹر وہیکل ایگزامینر کے پاس گاڑی پاس کرانے جاتے ہیں تو وہ کہتے ہیں کہ رکشوں کی رجسٹریشن پر ہائی کورٹ پشاور سے پابندی لگائی ہے تو ہم کیا کریں تاہم انہوں نے یہ بھی انکشاف کیا کہ بعض ایجنٹ حضرات 8 ہزار روپے لے کر رجسٹریشن کر رہے ہیں کیا ہائی کورٹ کی پابندی سے وہ مستثنیٰ ہیں یا کرپشن کی راہیں ہموار کی جا رہی ہیں انہوں نے ڈی پی او کوھاٹ سے مطالبہ کیا کہ جرمانے کی رقم کم کی جائے اور رجسٹریشن کی پابندی تک رعایت دی جائے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر