سونیری بینک کا سال2019کے اختتامی نتائج کا اعلان

      سونیری بینک کا سال2019کے اختتامی نتائج کا اعلان

  



کراچی (پ ر)سونیری بینک کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے 13فروری2020کولاہور میں منعقد ہونے والے75 1ویں اجلاس میں 31دسمبر2019کو ختم ہونے والے سال کیلئے بینک کے مالیاتی گوشواروں کی منظوری دے دی ہے۔بینک کا سال2019کا منافع قبل از ٹیکس 3,247(PBT)ملین روپے ہے اور منافع بعداز ٹیکس1,906(PAT)ملین روپے ہے، جو گزشتہ سال2018کے 2,905ملین روپے اور 1,784ملین روپے کے مقابلے میں 11.78فیصد اور6.86فیصدکا بالترتیب اضافہ ہے۔ان نتائج سے بینک کے فی حصص منافع میں بہتری آئی جو 2018میں 1.6179 روپے فی حصص تھا اور2019میں 1.7289روپے فی حصص ہے۔بورڈ آف ڈائریکٹرز نے 31دسمبر2019کو ختم ہونے والے سال کیلئے10 فیصدیعنی 1.00روپے فی حصص کے کیش ڈیویڈنڈ کا بھی اعلان کیا ہے۔سال کی خالص سودی آمدنی7,926(NII)ملین روپے ہے جو 14فیصدکا سال بسال اضافہ ہے۔ خالص سودی آمدنی میں یہ بہتری بنیادی طور پر بہتر حجم(Volumes) اور اسپریڈز کی وجہ سے آئی۔ غیر سودی آمدنی گزشتہ مد ت کے مقابلے میں کم رہی، جس کی اہم وجہ کیپٹل مارکیٹ پورٹ فولیو پر ہونے والا نقصان تھا،جبکہ فیس اور کمیشن کی آمدنی،ڈیویڈنڈ آمدنی اور زرمبادلہ کی آمدنی میں 9.89فیصد،28.30فیصد اور 15.46فیصد بالترتیب کی واضح بہتری آئی۔اخراجات میں اضافے کو گزشتہ سال کے مقابلیمیں 10.16فیصد تک محدود رکھا گیا۔31دسمبر2019کوختم ہونے والے سال کیلئے نان مارک اپ اخراجات8,129ملین روپے ہیں۔اس سال بینک کا نیٹ ایڈوانسز پورٹ فولیو 204,901ملین روپے رہا جس میں 9.88فیصدتک بہتری آئی۔نان پرفارمنگ ایڈوانسز میں 4فیصدتک کمی آئی،جو31 دسمبر 2018 کو11,357ملین روپے تھے اور 31دسمبر2019کو 10,903ملین روپے ہو گئے۔ اس کے نتیجے میں بینک کے انفیکشن ریشومیں بہتری آئی جو31دسمبر2018کو 5.83فیصد تھا اور31دسمبر2019کو5.13فیصد ہے۔مزید برآں،31دسمبر2019کو مخصوص پروویژن کوریج69.46فیصدپر ختم ہوئی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر