ایم ڈی پی آئی اے تقرری کیس،وفاقی حکومت نے جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا

ایم ڈی پی آئی اے تقرری کیس،وفاقی حکومت نے جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا
ایم ڈی پی آئی اے تقرری کیس،وفاقی حکومت نے جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی حکومت نے ایم ڈی پی آئی اے تقرری کیس میں سندھ ہائیکورٹ میں درخواست کو بدنیتی قراردیدیا،وفاقی حکومت نے جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا۔

وفاقی حکومت کی جانب سے جواب میں کہاگیا ہے کہ ارشد محمدو کی تعیناتی کی منظوری وفاقی کابینہ نے دی،ذمہ داریاں سنبھالنے کے بعدایم ڈی پی آئی اے نے غیرقانونی کاموں کیخلاف سخت ایکشن لیا،جواب میں مزید کہاگیا ہے کہ ارشدمحمودملک نے جعلی ڈگری اورغیرقانونی تقرریوں والوں کیخلاف بھی ایکشن لیا،ایم ڈی کی تعیناتی کے بعد پی آئی اے کے ریونیو میں 44 فیصداضافہ ہوا اور75 فیصد آپریشنل لاسز میں کمی آئی ۔

جواب میں مزید کہاگیا ہے کہ بطورڈپٹی چیئرمین کامرہ میں ریکارڈ16 تھنڈر طیارے بنائے،بطور چیئرمین جے ایف تھنڈربلاک 3 بھی بنایا۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد