آج کل دیگر ادارے عدلیہ کے کاموں میں مداخلت کرتے ہیں ،کے پی کے ججز حکومت سمیت کسی ادارے کے زیراثرنہ آئیں ،چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ

آج کل دیگر ادارے عدلیہ کے کاموں میں مداخلت کرتے ہیں ،کے پی کے ججز حکومت سمیت ...
آج کل دیگر ادارے عدلیہ کے کاموں میں مداخلت کرتے ہیں ،کے پی کے ججز حکومت سمیت کسی ادارے کے زیراثرنہ آئیں ،چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ نے کہاہے کہ موجودہ حالات میں عدلیہ میں ریفارمز بہت ضروری ہیں، آج کل دیگر ادارے عدلیہ کے کاموں میں مداخلت کرتے ہیں ،کے پی کے ججز حکومت سمیت کسی ادارے کے زیراثرنہ آئیں ۔

چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ جسٹس وقار احمد سیٹھ نے کہاکہ یہ اپنی نوعیت کی پہلی کانفرنس ہے ،عدلیہ کی طاقت اعتماد ہے ، انہوں نے کہا کہ عدلیہ کا دیگراداروں کی طرح احتساب ہوتا ہے،عدلیہ کو انتظامی سطح پر بھی اصلاحات کی ضرورت ہے ، مقدمات کو تیزی سے نمٹانے کیلئے اصلاحات کی ضرورت ہے۔

چیف جسٹس پشاورہائیکورٹ نے کہا کہ عدلیہ کے رجسٹرار ماتحت عدلیہ میں خوداعتمادی پیدا کرنے کاسبب ہیں ،موجودہ حالات میں عدلیہ میں ریفارمز بہت ضروری ہیں، آج کل دیگر ادارے عدلیہ کے کاموں میں مداخلت کرتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ کے پی میں جوڈیشل سیکرٹریٹ قائم ہے ،کے پی کے ججز حکومت سمیت کسی ادارے کے زیراثرنہ آئیں ۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد