بیگم کو متاثر کرنے کے لیے روسی شہری نے ویلنٹائنز ڈے پر ایسا کام کر دیا کہ جان کے لالے پڑ گئے

بیگم کو متاثر کرنے کے لیے روسی شہری نے ویلنٹائنز ڈے پر ایسا کام کر دیا کہ جان ...
بیگم کو متاثر کرنے کے لیے روسی شہری نے ویلنٹائنز ڈے پر ایسا کام کر دیا کہ جان کے لالے پڑ گئے

  



ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) ویلنٹائنز ڈے پر چاکلیٹس اور پھول وغیرہ تو سبھی لیتے دیتے ہیں لیکن روس میں ایک شخص نے ویلنٹائنز ڈے پر اپنی بیوی کے لیے ایک ایسا کام کر ڈالا کہ سن کر ہی کلیجہ منہ کو آ جائے۔ دی مرر کے مطابق اس شخص کا نام اولیگ ریزنوف ہے جو ریٹائرڈ فوجی ہے۔ اولیگ نے ویلنٹائنز ڈے پر اپنی بیوی کو خوش کرنے کے لیے خود کو 13منٹ کے لیے برف میں دفن کروا دیا۔ برف کی کئی فٹ تہہ کے نیچے دفن ہوتے ہوئے اس نے صرف شارٹس پہن رکھے تھے اور اس وقت درجہ حرارت منفی 32تھا۔ وہ اس دل کی شکل کی برف کی قبر میں 13منٹ تک دبا رہا اور پھر اس پر کھولتا ہوا پانی ڈالا گیا جس سے برف پگھل گئی اور وہ باہر نکل آیا۔

رپورٹ کے مطابق جب اولیگ باہر نکلا تو وہ بری طرح کانپ رہا تھا اور اس سے بولا بھی نہیں جا رہا تھا تاہم وہ اپنے قدموں پر چل کر گھر کے عمارت میں گیا جہاں اس کا اپارٹمنٹ واقع تھا۔ اس سٹنٹ کے بعد الیگ کا کہنا تھا کہ ”میں نے برف میں دفن ہونے کے بعد صرف 2بار سانس لیا۔ جتنی دیر میں دفن رہا اس وقت کے بارے میں مجھے کچھ یاد نہیں۔ کبھی کبھار مجھے باہر موجود لوگوں کی کوئی آواز سنائی دیتی تھی اور ایسا لگتا تھا کہ لوگ کہیں بہت دور سے بول رہے ہیں۔ تاہم جب انہوں نے ’12منٹ‘ کہا تو یہ لفظ مجھے صاف سنائی دیئے۔ کوئی بھی شخص یقین نہیں کر سکتا کہ میں نے یہ کام کیا ہے۔ دفن ہونے سے پہلے میں بھی تذبذب کا شکار تھا کہ میں ایسا کر پاﺅں گا یا نہیں۔ اب میں سمجھ گیا ہوں کہ انسان جو چاہے کر سکتا ہے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس