10ہزار قدم چلنے سے وزن کم ہو سکتا ہے یا نہیں؟ بڑا معمہ تحقیق کے بعد حل ہو گیا

10ہزار قدم چلنے سے وزن کم ہو سکتا ہے یا نہیں؟ بڑا معمہ تحقیق کے بعد حل ہو گیا
10ہزار قدم چلنے سے وزن کم ہو سکتا ہے یا نہیں؟ بڑا معمہ تحقیق کے بعد حل ہو گیا

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) عام خیال ہے کہ روزانہ 10ہزار قدم چلنے سے وزن کم ہو جاتا ہے لیکن اب سائنسدانوں نے جدید تحقیق میں اس کے برعکس انکشاف کر دیا ہے۔ گلف نیوز کے مطابق امریکہ کی برمنگھم ینگ یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے تحقیقاتی نتائج میں بتایا ہے کہ ان کی تحقیق میں ایسا کوئی ثبوت نہیں ملا جس سے تصدیق ہو کہ روزانہ 10ہزار قدم چلنے سے وزن کم ہوتا ہے یا موٹاپا بڑھنے سے رک جاتا ہے۔اس تحقیق میں سائنسدانوں نے 120مردوخواتین پر تجربات کیے۔

اس تحقیق میں سائنسدانوں نے ان مردوخواتین کو تین گروپوں میں تقسیم کیا اور انہیں 24ہفتے تک روزانہ بالترتیب 10ہزار، ساڑھے 12ہزار اور 15ہزار قدم چلنے کو کہا۔ ساتھ ساتھ وہ ان کی خوراک اور وزن کا جائزہ لیتے رہے۔ آخر میں معلوم ہوا کہ تینوں گروپوں کے لوگوں میں سے جنہوں نے اپنی خوراک پہلے سی رکھی ان کے وزن میں کوئی کمی نہیں آئی تھی بلکہ ان کا وزن اسی طرح بڑھ رہا تھا۔ اس کے برعکس جن لوگوں نے کیلوریز کم کی تھیں ان کے وزن میں کمی آنی شروع ہو گئی تھی۔ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ بروس بیلے کا کہنا تھا کہ ”صرف ورزش وزن کم کرنے کے لیے کافی نہیں ہے۔ صرف وزش کرنے سے انسان کی فزیکل ایکٹیویٹی بڑھتی ہے، موٹاپا کم نہیں ہوتا۔ ہماری تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ اگر آپ موٹاپا کم کرنے کے لیے ورزش کرنا چاہتے ہیں تو اس کے ساتھ آپ کو اپنی خوراک میں بھی تبدیلی لانی ہو گی۔ “

مزید : تعلیم و صحت