غداری کا مقدمہ، مولانا فضل الرحمان خود میدان میں آگئے، بغاوت جاری رکھنے کا اعلان کردیا

غداری کا مقدمہ، مولانا فضل الرحمان خود میدان میں آگئے، بغاوت جاری رکھنے کا ...
غداری کا مقدمہ، مولانا فضل الرحمان خود میدان میں آگئے، بغاوت جاری رکھنے کا اعلان کردیا

  



ڈیرہ اسماعیل خان (ڈیلی پاکستان آن لائن) جمعیت علماءاسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا ہے کہ فاٹا کے خیبر پختونخوا میں انضمام کی جو غلطی پاکستان نے کی وہی غلطی بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں کی ہے، حکمران پہلے ناجائز تھے، پھر نا اہل اور اب جاہل ہوگئے ہیں، ان کی کبھی اطاعت کی ہے اور نہ ہی کروں گا، اگر یہ بغاوت ہے تو بغاوت کرتا رہوں گا۔

پیغام وزیرستان کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ ملک میں آج بھی مارشل لا نافذ ہے، پاکستان میں قانون اور جمہوریت نہیں ہے، ہماری جدوجہد قانون اور آئین کے تحت جاری ہے، ہم جبر اور دباﺅ کے فیصلوں کو نہیں مانتے۔

انہوں نے کہا کہ فاٹا کو الگ صوبہ بنایا جانا چاہیے تھا، قبائلی اضلاع کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنا ایک غلطی تھی اور ایسی ہی غلطی بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں دہرائی ہے۔ حکمران گندگی میں چونچ مار کر چونچ اوپر رکھنے کی کوشش کرتے ہیں، یہ پہلے ناجائز تھے ، پھر نا اہل اور اب جاہل بھی ہوگئے ہیں، ان کی اطاعت نہ کی ہے اور نہ کروں گا، اگر یہ بغاوت ہے تو بغاوت کرتا رہوں گا۔

مولانا فضل الرحمان نے وزیر اعظم عمران خان کا نام لیے بغیر کہا ’ وہ آج کہتا ہے کہ فوج میری پشت پر ہے، ہم کہتے ہیں کہ ہم فوج کی پشت پر کھڑے ہیں، ہم ادراوں کے ساتھ ہیں مگر اداروں کو بھی ملک کیلئے سوچنا چاہیے۔‘

مزید : قومی