اسلام کا حقیقی تشخص اجاگر کرنے کیلئے جدید علوم سے آگاہی ضروری،طاہر رضا

اسلام کا حقیقی تشخص اجاگر کرنے کیلئے جدید علوم سے آگاہی ضروری،طاہر رضا

  

لاہور(فلم رپورٹر) اسلام کے حقیقی تشخص کو اْجاگر کرنے کے لیے جدید علوم سے آگاہی ضروری ہے۔اسوہء رسول ؐ اور سیرت طیبہؐ کے ذریعے ہی دنیا تکریم آدمیت اور شرفِ انسانیت کی منزل حاصل کرسکتی ہے۔ اسلامو فوبیا کے تدارک کے لئے، عالمی برادری کو قدم اٹھانے کی ضرورت ہے۔ عالمی لیڈر شپ مذاہب کے احترام کو یقینی بنائے،دعوت و تبلیغ کے لئے صوفیاء  کے اسلوب کو اپنانے کی ضرورت ہے۔ان خیالات کا اظہار ڈائریکٹر جنرل اوقاف ڈاکٹر طاہر رضا بخاری  اور چیئرمین اسلامک سپریم کونسل کینیڈا سیّد بد یع الدین شاہ سہروردی نے، ہجویری ہال داتاؒدربار میں منعقدہ سیمینار ”مدرسہ ایجوکیشن اور عصری چیلنجز“ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ مقررین جن میں مفتی محمد اقبال چشتی، خطیب داتاؒدربار مفتی محمد رمضان سیالوی، پرنسپل جامعہ ہجویریہ صاحبزادہ بدرالزمان قادری، مولانا عرفان اللہ اشرفی اور دیگر شخصیات موجود تھیں۔

ہر رضا بخاری نے کہا کہ اس وقت مدرسہ ایجوکیشن کو بین الاقوامی سطح پر جن چیلنجز کا سامنا ہے، اس سے نبرد آزما ہونے کے لئے جدید علوم، عصری تعلیم اور ماڈرن سائنسز سے آگاہی از حد ضرور ی ہے۔ مقررین نے کہا کہ اس وقت مسلماں دنیا کا سب سے بڑا چیلنج اتحاد اور دہریت ہے، جس کا مقابلہ کرنے کے لئے علمی سطح پر مؤثر اور مضبوط سکالر ہی، دنیا کے سامنے اسلام کی صحیح تعلیمات پیش کر سکتے ہیں۔  

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -