حجاب تنازع، او آئی سی کا  بھارت میں بڑھتے ہوئے  اسلامو فوبیا پراظہار تشویش

  حجاب تنازع، او آئی سی کا  بھارت میں بڑھتے ہوئے  اسلامو فوبیا پراظہار تشویش

  

 ریاض/جدہ  (آئی این پی) اسلامی تعاون تنظیم(او آئی سی)نے بھارت کی ریاست اتراکھنڈ میں مسلمانوں کے قتل عام کی دعوت دینے، سوشل میڈیا پر مسلم خواتین کو پریشان کرنے اور مسلم طالبات کو حجاب سے سے منع کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے    بھارتی  حکومت سے مطالبہ کیاہے کہ وہ  مسلمانوں کی امن وسلامتی اور مسلم کمیونٹی کے زندگی گزارنے کے طور طریقوں کو تحفظ فراہم کر یں،تشدد اور نفرت پر مبنی جرائم پر اکسانے والوں اور مرتکب افراد کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔ پیر کوسعودی میڈیا کے مطابق او آئی سی نے مسلمانوں کی عبادتگاہوں پر حملے اور مختلف ریاستوں میں مسلمانوں کے خلاف قانون سازی کے علاوہ مسلمانوں کے خلاف ہونے والے حادثات، حادثات کا سبب بننے والوں کا سزا سے بچنا ملک میں اسلامو فوبیا کی بڑھتی ہوئی علامات ہیں۔اوآئی سی نے  بھارتی  حکومت سے مسلمانوں کی امن وسلامتی اور مسلم کمیونٹی کے زندگی گزارنے کے طور طریقوں کو تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔او آئی نے عالمی برادری اور خصوصا اقوام متحدہ کے تحت انسانی حقوق کونسل کو اس سلسلے میں ضروری اقدامات کرنے کا بھی مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ بھارتی حکام مسلم کمیونٹی کی حفاظت اور سلامتی کو یقینی بنائیں، ان کے طرح ز زندگی کی حفاظت کریں، اور تشدد اور نفرت پر مبنی جرائم پر اکسانے والوں اور مرتکب افراد کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

او آئی سی

مزید :

صفحہ اول -