نوشہرہ، قاضی میڈیکل کمپلیکس کے عملہ کا بورڈ پالیسیوں کیخلاف مظاہرہ

نوشہرہ، قاضی میڈیکل کمپلیکس کے عملہ کا بورڈ پالیسیوں کیخلاف مظاہرہ

  

        نوشہرہ (بیورورپورٹ) قاضی میڈیکل کمپلیکس کے طبی اور انتظامی عملے کا کمپلیکس کے بورڈ آف گورنر کی پالیسیوں کے خلاف سراپا احتجاج،او پی ڈی بند،ہسپتال میں آنے والے مریضوں کو مشکلات کا سامناہسپتال آنے والے مریض ایڑیا رگڑ رگڑ کر مایوس ہوکر واپس چلے گئے،طبی عملہ،انتظامی عملہ اور اسپتال انتظامیہ کے مابین رسہ کشی سے مریض رل گئے،تفصیلات کے مطابق قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ کے طبی و انتظامی عملے نے ہسپتال کے بورڈ آف گورنرکی ناقص و ملازم کش پالیسیوں کے خلاف بھر پور احتجاج کرتے ہوئے،ہسپتال کی تمام شعبہ جات کی او پی ڈیز بند کرکے دھرنا دینے بیٹھ گئے،اور ہسپتال میں آنے والے مریضوں کو احتجاج کی وجہ سے مشکلات کا سامنا کرنا پڑا،احتجاجی ملازمین کا کہنا تھا کہ قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ کے بورڈ آف گورنر ایک ملازم کش بورڈ ہے،آئے روز ملاز مین کو نوکریوں فارغ کیا جارہا ہے چاہے وہ ینگ ڈاکٹرز ہو کلاس فور ہو یا پیرا میڈیکس سٹاف سمیت انتظامی سٹاف ہو،انہوں نے کہا کہ 120 ملازمین کو پہلے ہی فارغ کیا جاچکا ہیں،جبکہ مزید 160 ملازمین کو فارغ کرنے کی منصوبہ بندی اپنے آخری مراحل کو پہنچ چکی ہیں،انہوں نے کہا کہ بورڈ آف گورنر کے چیئرمین ہسپتال کی بہتری پر توجہ دے نہ کہ ملازمین کو تنگ کرے،انہوں نے کہا کہ اگر یہی رویہ رہا تو آج صرف اسپتال میں او پی ڈی بند کر دی ہیں،ایسا نہ ہو کہ نوبت یہاں تک آئے کہ ہم مجبوراً ایمرجنسی اور آپریشن تھیٹرز بند کرے،واضح رہے کہ اسپتال میں طبی عملے کے احتجاج سے اسپتال میں آنے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا کرنا  پڑا  اور آنے والے مریض واپس ایڑیا رگڑ رگڑ چلے گئے،واضح رہے کہ قاضی میڈیکل کمپلیکس نوشہرہ کے احتجاجی ملازمین نے اپنے مطالبات کے حق کے لئے سڑکوں پرنکلنے کا اعلان کردیا ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -