قوم فیصلہ کر لے، پرانا نظام چاہئے یا عدل و انصاف پر مبنی نیا نظام، عابد شیر علی بجلی چور نہیں پکڑ سکتے تو مستعفی ہو جائیں: عمران خان

قوم فیصلہ کر لے، پرانا نظام چاہئے یا عدل و انصاف پر مبنی نیا نظام، عابد شیر ...
قوم فیصلہ کر لے، پرانا نظام چاہئے یا عدل و انصاف پر مبنی نیا نظام، عابد شیر علی بجلی چور نہیں پکڑ سکتے تو مستعفی ہو جائیں: عمران خان

  

خوشاب (مانیٹرنگ ڈیسک) تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہا ہے کہ قوم فیصلہ کر لے کہ انہیں پرانا نظام چاہئے یا انصاف اور انسانیت پر مبنی نیا نظام چاہتے ہیں ، عوام آزمائے ہوئے لوگوں کو ووٹ نہ دیں۔ خوشاب میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ عابد شیر علی نالائق آدمی ہیں، پیسکو مرکز کے ماتحت ہے، اگر وہ بجلی چوروں کو نہیں پکڑ سکتے تو مستعفی ہو جائیں ۔ انہوں نے کہا کہ ہم نیا نظام لانا چاہتے ہیں ایسا نظام جو اس دنیا کے عظیم ترین انسان اور لیڈر ہمارے نبی حضرت محمدﷺ 1400 سال پہلے لائے، وہ نظام انصاف اور انسانیت پر مبنی تھا جس میں انسانیت کی قدر تھی اور کوئی چھوٹا یا بڑا نہیں تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس زمانے میں ایک طرف روم کی ریاست تھی تو دوسری طرف ایران کی ریاست تھی اور عرب غریب ترین تھے، لیکن نبی کریم ﷺ ایک ایسا نظام لے کر آئے جس کی بنیاد انسانیت اور عدل و انصاف پر تھی، انسانیت کی قدر تھی، اسی نظام کے تحت دو خلفائے راشدین بھی انصاف کے کٹہرے میں کھڑے ہوئے ۔ انہوں نے کہا کہ حضرت عمر رضی اللہ تعالی عنہ نے سب سے پہلے فلاحی ریاست کی بنیاد رکھی جس میں بوڑھے لوگوں کے لئے پنشن کا اہتمام کیا گیا وہ بھی اس وقت انصاف کے کٹہرے میں کھڑے ہوئے جب ان سے پہنے ہوئے کپڑوں سے متعلق سوال کیا گیا۔ عمران خان نے کہا کہ اسی عظیم نظام کے تحت 700 سال تک مسلمان دنیا کی عظیم طاقت اور سپر پاور رہے۔ دنیا کی تاریخ بتاتی ہے کہ سارے عظیم سائنسدان مسلمان تھے کیونکہ ہمارے نبیﷺ نے تعلیم پر زور دیا، اپنی قوم کو کہا کہ سب سے زیادہ ضروری ایک انسان کیلئے علم حاصل کرنا چاہے اس کیلئے تمہیں چین ہی کیوں نہ جانا پڑے۔ آج یورپ امریکہ اس لئے ہم سے آگے نکل گئے ہیں کیونکہ انہوں نے سپین میں حکومت کرنے والے مسلمانوں سے تعلیم حاصل کی اور اسی پر توجہ مرکوز رکھی لیکن ہم بادشاہت میں پڑے گئے اور اپنے آپ کو برباد کر لیا۔ انہوں نے کہا کہ آج پاکستان جس موڑ پر کھڑا ہے اگر آپ نے روائتی سیاست کی اور ضمیر کے مطابق حق اور سچ کی سیاست نہ کی آپ کے بچوں کا مستقبل اندھیرے میں ہے، بار بار آپ انہی لوگوں کو ووٹ دیں گے تو نظام ٹھیک نہیں ہو سکتا۔

مزید : نوشہرہ /اہم خبریں