کسان تنظیمیں حکومتی پالیسیوں کیخلا ف سراپا احتجاج ہیں،منظوروٹو

کسان تنظیمیں حکومتی پالیسیوں کیخلا ف سراپا احتجاج ہیں،منظوروٹو

  

لاہور( نمائندہ خصوصی ) پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر میاں منظور وٹو نے اپنے بیان میں خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس سال گندم کی پیداوار کا ہدف حاصل نہیں ہو سکے گا کیونکہ بجلی کی تباہ کن لوڈشیڈنگ کی وجہ سے کسان ٹیوب ویل نہیں چلا سکتے اور گندم کی فصل کو پانی نہیں مل رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کسانوں کی تمام تنظیموں میں اس حکومت کا کاشتکار دشمن کا تاثر دن بدن مضبوط ہو رہا ہے اور وہ سراپا احتجاج ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ چاول کا کاشتکار پہلے ہی تباہ حال ہے کیونکہ اس سال چاول کی قیمت اتنی رہی ہے جو کہ کسان کے اٹھنے والے اخراجات سے بھی کم ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت چاول کے کاشتکاروں کو سبسڈی دینے کے معاملے میں ابھی تک ٹس سے مس نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے نواز شریف کی حکومت کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ جنہوں نے لوگوں کو بشمول انکے لکڑیاں جلا کر کھانا پکانے پر مجبور کر دیا ہے۔ اسوقت پاکستان پتھر کے زمانے کا ملک نظر آتا ہے جہاں پر گیس ہے اور نہ ہی بجلی۔ انہوں نے کہا کہ لوگ شہباز شریف کے ایجاد کئے ہوئے ہاتھوں کے پنکھے اکٹھے کر رہے ہیں تا کہ آئندہ گرمیوں کے موسم میں گرمی کا مقابلہ کر سکیں کیونکہ بجلی کے پنکھوں کا چلنا مشکل نظر آتا ہے۔ وٹو

مزید :

صفحہ آخر -