مینٹل ہسپتال میں عملے کی کمی ،مریضوں کو مشکلات کا سامنا

مینٹل ہسپتال میں عملے کی کمی ،مریضوں کو مشکلات کا سامنا

لاہور(محمد نواز سنگرا)پنجاب کے اکلوتے دماغی ہسپتال میں فنڈز ،سہولیات اور سٹاف کی عدم دستیابی ، صوبے بھر کے دور دراز سے آنے والے مریضوں کو پریشانی کا سامنا ہے ۔کنسلٹنٹ فزیشن کی 8سیٹوں میں سے4خالی جبکہ سینئر کلینکل سائیکالوجسٹ کی 2سیٹوں میں سے ایک خالی ہے جن کو پر کرنے کیلئے ایگزیکٹو ڈائریکٹر پنجاب انسٹیٹوٹ آف مینٹل ہیلتھ نے سیکرٹری صحت کو خط لکھ دیا ہے۔تفصیلات کے مطابق چیف ایگزیکٹو پنجاب انسٹیٹیوٹ آف مینٹل ہیلتھ نے سیکرٹری سپشلائزڈ ہیلتھ کئیر اینڈ میڈیکل ایجوکیش ڈیپارٹمنٹ کو خط لکھا ہے کہ پنجاب کا اکلوتا دماغی ہسپتال جو کہ 1400 بیڈز پر مشتمل ہے جہاں او پی ڈی میں روزانہ 600 سے 700مریض آتے ہیں سالانہ7000مریضوں کو ہسپتال میں داخل کیا جاتا ہے اور تمام مریضوں کو 100فیصد فری ادویات دی جاتی ہیں اس کے باوجود بھی ہسپتال میں سیٹیں خالی ہیں۔سٹاف کی کمی اور مریضوں کی تعداد میں دن بدن اضافے کی وجہ سے موجودہ سٹاف بھی پریشانی کا شکا ر ہے۔ایگزیکٹو ڈائریکٹر نے سیکرٹری ہیلتھ سے درخواست کی ہے کہ ادارے کی بہتری اور مریضوں کی بھلائی کیلئے سٹاف کی کمی کو فی الفور پورا کیا جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1