ارفع کریم کی چوتھی برسی کے موقع پر دعائیہ تقریبات کا اہتمام

ارفع کریم کی چوتھی برسی کے موقع پر دعائیہ تقریبات کا اہتمام

لاہور(خبر نگار خصوصی)تنظیم اتحاد امت پاکستان کے زیر اہتمام ملک بھر میں ارفع کریم کی چوتھی برسی کے موقع پر دعائیہ تقریبات کا اہتمام کیا گیا اوران کی ذات کو زبردست خراج تحسین بھی پیش کیا اس موقع پر چیئرمین تنظیم اتحاد امت پاکستان محمد ضیاء الحق نقشبندی اور مشیر ہلال احمر پاکستان برائے مذہبی امورنے سمن آباد ٹاؤن میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ارفع کریم جیسی بے شمار بچیوں کو تلاش کرکے ارفع کریم کے ادھورے مشن کو مکمل کر سکتے ہیں ۔ارفع کریم یہ مت سمجھنا پاکستانی قوم تمہیں بھول جائے گی آپ کی خدمات کو ہم سنہری حروف سے لکھیں گے ۔ ارفع کریم کی صلاحیت اور قابلیت سے نوجوان نسل کو آگاہ رکھنا ضروری ہے ۔ارفع کریم رندھاوا نے دنیا کی کم عمر ترین مائیکرو سافٹ سرٹیفائیڈ پروفیشنل ہونے کا اعزازحاصل کر کے دنیا بھر میں پاکستان کا نام روشن کیا ۔ ارفع کریم جیسی نوجوان نسل پاکستان کا اصل چہرہ ہے۔ارفع کریم جیسی نوجوان نسل کی حوصلہ افزائی کرنا انتہائی ضروری ہے ارفع کریم کم عمر ترین ’’ صدارتی ایوارڈ ‘‘،’’مادرملت جناح طلائی تمغے’’ اور’’ سلام پاکستان یوتھ ایوارڈ’’ سے بھی نوازاجاناخوش آئند تھا۔اہل اسلام اور اہل پاکستان کوارفع کریم پر ہمیشہ فخر رہے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی نظریاتی سرحدوں کا دفاع ارفع کریم جیسی بیٹیاں ہی کریں گی جس سے دنیا کے سامنے پاکستان کا روشن چہرہ واضح ہوگا۔ ۔ارفع کریم کے اس خواب کو پورا کرنے کے لیے اس سے محبت کرنے والوں کو چاہیے کہ وہ اپنی بچیوں کو اعلیٰ سے اعلیٰ تعلیم دلوانے میں کوئی کسر نہ چھوڑیں ۔تاکہ ارفع کریم جیسی مزید بچیاں پاکستان کو مل سکیں ۔ قاری غلام حسین نقشبندی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں ٹیلنٹ کی کمی نہیں ہے۔غربت ،حکومت کی عدم دلچسپی کی وجہ سے پاکستان پیچھے ہے۔اگر ہم تعلیم کو ملک میں عام کریں ،تو بہت سے مسائل کا حل نکل سکتا ہے ۔مفتی محمد قیصر شہزاد نعیمی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ارفع کریم پر پوری قوم ناز تھا اور رہے گا۔مفتی ابو بکر اعوان ایڈووکیٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام نے جو حق بچیوں کو تعلیم کے لیے دیا ارفع کریم نے اس حق کو پورا کرتے ہوئے دنیا میں پاکستان کا نام روشن کیا۔نارووال میں پیر سید کرامت علی حسین سجادہ نشین علی پورسیداں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ارفع کریم کی سوچ ،فکر ،ذہانت اوراپروچ کو عام کرنے کی ضرورت ہے ۔شیخوپورہ میں محمد آصف طاہر نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ارفع کریم جیسی ذہانت رکھنی والی نوجوان نسل کے ذہنوں کو مایوس کرنے کی بجائے ان کی حوصلہ افزائی کرنی چاہیے ۔کامونکی میں صاحبزادہ محمد عثمان جلالی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ خطہ غربت کی لیکر سے نیچے زندگی بسر کرنے والی نوجوان نسل کی بھی ہمیں فکر کرنی چاہیے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4