گورنمنٹ پرائیویٹ سکولز کے ساتھ یتیموں جیسا سلوک بند کرے ،خالد محمود

گورنمنٹ پرائیویٹ سکولز کے ساتھ یتیموں جیسا سلوک بند کرے ،خالد محمود

لاہور( اپنے نامہ نگار سے )صدر پرائیویٹ سکولز ایسو سی ایشن ملک خالد محمود نے کہا ہے کہ گورنمنٹ پرائیویٹ سکولز کے ساتھ یتیموں جیسا سلوک بند کرے ،پرائیویٹ تعلیمی اداروں کی رجسٹریشن کا معاملہ حکومت خواہ مخواہ پیچیدہ سے پیچیدہ بنا کر اپنے اور اداروں کیلئے مسائل پید اکر رہی ہے نئے رجسٹریشن پراسس کو مسترد کرتے ہیں نئے رجسٹریشن کا طریقہ انتہائی ناقابل فہم اور ناقابل عمل ہے کیونکہ اب تک نئی بنائی گئی کمیٹیوں میں سے کسی ایک کمیٹی نے بھی کسی ادارے کا وزٹ نہیں کیا کیونکہ نئی اعلیٰ افسران پر مشتمل کمیٹیوں کے پاس وزٹ کا ٹائم ہی نہیں یہی وجہ ہے کہ 137 نئے طرز کمیٹیاں تعلیمی اداروں کا وزٹ نہیں کر سکیں جس کے باعث تعلیمی اداروں کے لئے مسائل بڑھ رہے ہیں داخلے بھیجنے میں پریشانی کا سامنا ہو رہا ہے انھوں نے کہا کہ حکومت ہوش کے ناخن لیتے ہوئے پرانا رجسٹریشن کا طریقہ بحال کرے ۔

انہوں نے کہا کہ پرانا طریقے کے علاوہ ہمیں کوئی طریقہ قابل قبول نہیں ، انہوں نے محکمہ تعلیم کی طرف سے تعلیمی اداروں کو جاری کئے جانے والے غیر ضروری نوٹسز پر احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ تعلیمی اداروں کو ہراساں کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے ۔

چار،چار ،پانچ سال قبل جمع کروائے گئے کیسز،فیسیں جمع کروانے ،کمیٹیوں کی تصدیق کے باوجود رجسٹریشن لیٹر جاری کرنے کی بجائے نوٹسز جاری کرنا تعلیمی اداروں کے ساتھ کھلی زیادتی ہے ماضی میں رجسٹریشن کیلئے دی گئی درخواستوں کو پہلے کلیئر کیا جائے ،حکومت انتقامی طرز بدلے اور تعلیمی اداروں کو فروغ علم کیلئے کام کرنے دے بصورت دیگر سٹوڈنٹس کے ہمراہ سڑکوں پر نکل آئیں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...