136 جعلی کانسٹیبلز کی بھرتی کے مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعات ختم

136 جعلی کانسٹیبلز کی بھرتی کے مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعات ختم

لاہور(نامہ نگار)انسداد دہشت گردی کی عدالت نے پولیس کے 136جعلی کانسٹیبلز کی بھرتی کے مقدمہ میں دہشت گردی کی دفعات ختم کرکے کیس اینٹی کرپشن عدالت میں بھجوا دیاہے۔ انسداد دہشت گردی کی عدالت میں تھانہ پرانی انارکلی پولیس نے محمد سرور سمیت آٹھ ملزمان کے خلاف محکمہ پولیس میں 136کانسٹیبل بھرتی کرنے کے الزام میں چالان پیش کررکھا ہے چالان پیش ہونے پر عدالت نے ملزمان کو فرد جرم کے لئے طلب کیا ملزمان کے وکیل آفتاب باجوہ اور فیصل باجوہ ایڈووکیٹ نے درخواست دی کہ ملزمان کا کیس دہشت گردی کے زمرے میں نہیں آتا اس واقع سے کوئی دہشت گردی کی فضا پیدا نہیں ہوئی ملزمان جو گرفتار ہیں وہ سرکاری ہے اور سرکاری محکمے میں فراڈ ہوا ہے اس کے لئے باقاعدہ اینٹی کرپشن کورٹ بنائی گئی ہے عدالت سے استدعا ہے کہ دہشت گردی کی دفعات کو ختم کرکے کیس کو اینٹی کرپشن عدالت میں بھجوایا جائے ،عدالت نے وکلا کے دلائل کے بعد کیس سے دہشت گردی کی دفعات ختم کردی اور چالان اینٹی کرپشن کی عدالت میں بھجوانے کا حکم جاری کردیاہے۔

مزید : علاقائی