اثاثوں کی انکوائری تبدیل کرانے کی درخواست پر ایک ہفتے میں فیصلہ کرنے کا حکم

اثاثوں کی انکوائری تبدیل کرانے کی درخواست پر ایک ہفتے میں فیصلہ کرنے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے ڈی جی نیب پنجاب کو محکمہ آبپاشی کے سب انجینئر کے خلاف اثاثوں کی انکوائری تبدیل کرانے کی درخواست پر ایک ہفتے میں فیصلہ کرنے کا حکم دے دیا، جسٹس شہباز علی رضوی کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے سب انجینئر اشرف باجوہ کی درخواست پر سماعت کی، درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ نیب میں درخواست گزار کے اثاثوں اور آمدن سے متعلق انکوائری چل رہی ہے، درخواست گزار نے اپنے، اہلیہ اور خاندان کے دیگر افراد کے اثاثوں اور آمدن کی تفصیلات جمع کرا دی ہیں مگر اس کے باوجود اسسٹنٹ ڈائریکٹر نیب پنجاب وقاص رفیق ان کے خلاف بلاجواز تحقیقات کررہے ہیں اور ان کے خاندان کے افراد کو گرفتار کرنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں، اسسٹنٹ ڈائریکٹر کے رویے کیخلاف اور انکوائری تبدیل کرانے کے لئے ڈی جی نیب کو درخواست دی ہے مگر درخواست پر فیصلہ نہیں کیا جا رہا ہے، ابتدائی سماعت کے بعد عدالت نے ڈی جی نیب پنجاب کو حکم دیا کہ انکوائری تبدیلی کی درخواست پر ایک ہفتے میں فیصلہ کیا جائے۔

مزید : علاقائی