پنجاب میں کالعدم تنظیموں ،دہشتگردوں کیخلاف بڑے پیمانے پر آپریشن کی ریاریاں مکمل

پنجاب میں کالعدم تنظیموں ،دہشتگردوں کیخلاف بڑے پیمانے پر آپریشن کی ریاریاں ...

 لاہور (کرائم رپورٹر، آئی این پی )پنجاب میں کالعدم تنظیموں، دہشت گردوں اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف بڑے پیمانے پر آپریشن کرنے کی تیاریاں مکمل کر لی گئیں، ابتدائی طور پر آپریشن راجن پور، ڈیرہ غازی خان اور رحیم یار خان میں کیا جائے گا ، جس میں پولیس ،ایلیٹ فورس اور رینجرز کے اہلکار حصہ لیں گئے جب کہ ضرورت پڑنے پر فوج کی مدد بھی لی جائے گی، مختلف شہروں سے کالعدم جیش محمد کے مزید کئی کارکنوں کو حراست میں لے لیا گیا۔ پٹھان کوٹ ایئر بیس پر ہونے والے حملے اور بھارتی شواہد کے بعد اور پنجاب کے مختلف علاقوں میں کالعدم تنظیموں کے بڑھتے ہوئے اثر و رسوخ کے پیش نظر صوبے میں بڑے پیمانے پر آپریشن کرنے کی تیاریاں مکمل کر لی گئیں ہیں ۔ رپورٹس کے مطابق آپریشن ابتدائی طور پر راجن پور، ڈیرہ غازی خان اور رحیم یار خان میں کیا جائے گا جہاں کالعدم تنظیموں کا اثر و رسوخ باقی علاقوں کی نسبت زیادہ ہے۔ پنجاب کی دوسرے صوبوں کے ساتھ ملنے والی سرحدوں کی کڑی نگرانی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے جب کہ سرحدوں کی نگرانی کے لئے پیرا ملٹری فورس تعینات کی جائے گی ۔ تین اضلاع میں کیے جانے والے آپریشن میں پولیس ، ایلیٹ فورس اور رینجرز اہلکار حصہ لیں گے ضرورت پڑنے پر فوج کی مدد بھی لی جائے گی ۔ دوسری جانب قانون نافذ کرنے والے اداروں کے اہلکاروں نے مختلف شہروں میں کاروائیاں کرکے کالعدم جیش محمد کے کئی کارکنوں کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پرمنتقل کر دیا ہے جن سے تفتیش کا عمل جاری ہے ۔ گرفتار کارکنوں کے انکشاف کے بعد مزید گرفتاریوں کا امکان ہے ۔ دوسری جانب انسداد دہشت گردی ڈیپارٹمنٹ نے سیالکوٹ کی تحصیل ڈسکہ کے گاؤ ں منڈیکی گورائیہ میں مدرسہ عبداللہ ابن مبارک پر چھاپہ مارا اور چودہ دہشت گردوں کو گرفتار کر لیا۔ گرفتار ہونے والوں میں فورتھ شیڈول میں شامل قاری تنویر سمیت چار خطرناک دہشت گرد بھی شامل ہیں۔حساس اداروں نے مدرسے کے مہتمم پر کالعدم تنظیم کے دہشت گردوں کو پناہ دینے اورفنڈنگ کرنے کی اطلاع پر کارروائی کی۔ مذہبی منافرت پھیلانے والا لٹریچرا ور کمانڈو جیکٹس برآمد کرنے کے بعد مدرسہ سیل کر دیا گیا۔واضح رہے کہ گزشتہ روز وزیر اعظم ہاؤس میں وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت میں ہونے والے اعلیٰ سطحی اجلاس میں پٹھانکوٹ ائیر بیس حملے سے متعلق بھارت کی جانب سے فراہم کیے جانے والے شوائد جیش محمد اوردیگرکالعدم تنظیموں کی کارروائیوں کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اجلاس میں وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان ، چیف آف آرمی سٹاف جنرل راحیل شریف ، وزیر اعلیٰ پنجاب شہباز شریف اور کور کمانڈر لاہور نے خصوصی طور پر شرکت کی ۔ نجی ٹی وی کے مطابق اجلاس میں بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا تھاکہ کالعدم جیش محمد کے سربراہ مولانا مسعود اظہر بھائیوں سمیت حفاظتی تحویل میں لیا گیا ہے ۔

بڑے پیمانے پر آپریشن

مزید : صفحہ آخر


loading...