بدعنوانی کے اثرات سے آگاہی اور تدراک کی حکمت عملی کامیاب: چیئر مین نیب

  بدعنوانی کے اثرات سے آگاہی اور تدراک کی حکمت عملی کامیاب: چیئر مین نیب

  



اسلام آباد(آئی این پی)قومی احتساب بیوروکے چیئرمین جسٹس(ر)جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب کی بدعنوانی سے متعلق برے اثرات سے آگاہی اور تدارک کی حکمت عملی کامیاب رہی،عالمی اقتصادی فورم نے لوگوں کو بدعنوانی کے مضر اثرات سے متعلق آگاہی پیدا کرنے پر نیب کی آگاہی حکمت عملی کو سراہا ہے، اس حکمت عملی کے تحت نیب مختلف سرکاری اداروں، غیر سرکاری تنظیموں، میڈیا، سوسائٹی اور معاشرہ کے دیگر طبقات سے مل کر کام کر رہا ہے تاکہ لوگوں بالخصوص نوجوانوں کو اوائل عمری میں بدعنوانی کے برے اثرات سے آگاہ کیا جا سکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز نیب ہیڈ کوارٹرز میں نیب کی آگاہی و تدارک کی حکمت عملی کے جائزہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ عالمی اقتصادی فورم کے عالمی مسابقتی انڈیکس رپورٹ 2019میں نیب کی بدعنوانی کے مضر اثرات کی روک تھام کیلئے آگاہی و تدارک کی حکمت عملی کی تعریف کی گئی ہے جو کہ پاکستان اور نیب کیلئے قابل فخر ہے۔ انہوں نے کہا کہ قومی احتساب بیورو نیب آرڈیننس کے سیکشن 33 سی کے تحت بدعنوانی کے خلاف آگاہی اور تدارک کی پالیسی اختیار کر سکتا ہے۔ چیئرمین نیب نے کہا کہ نیب احتساب سب کیلئے کی پالیسی پر عمل کرتے ہوئے بدعنوانی کے میگا کرپشن مقدمات کو ترجیحی بنیادوں پر نمٹانے کیلئے تمام وسائل بروئے کار لا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیب کی مو ثر آگاہی اور تدارک کی حکمت عملی کے باعث یہ فعال اور معتبر ادارہ بن چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بزنس کمیونٹی کے مسائل کے حل کیلئے نیب نے نیب ہیڈکوارٹرز میں ایک ڈائریکٹر کی سربراہی میں الگ خصوصی سیل قائم کیا ہے۔ چیئرمین نیب نے بلاامتیاز احتساب سب کیلئے کی پالیسی پر عمل کرتے ہوئے ملک سے بدعنوانی کے خاتمہ کا عزم کیا۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ تمام متعلقہ فریقوں کی کوششوں سے بدعنوانی سے پاک پاکستان کے خواب کو عملی جامہ پہنایا جا سکتا ہے۔

چیئرمین نیب

مزید : صفحہ آخر


loading...