3مزید ریجنل آفس قائم، ہائی سکیورٹی پر یزن میانوالی کا تعمیراتی کام مکمل

3مزید ریجنل آفس قائم، ہائی سکیورٹی پر یزن میانوالی کا تعمیراتی کام مکمل

  



لاہور (کر ائم رپو رٹر)محکمہ جیل خانہ جات نے اپنی16ماہ کی کارکردگی رپورٹ جاری کر دی ہے جس کے تحت مزید3نئے ریجنل آفس سر گو دھا، بہاولپور اور ڈیرہ غازی خان میں قائم کر دئیے گئے ہیں۔ہائی سکیورٹی پریزن میانوالی اور ڈسٹرکٹ جیل، لودھراں کا تعمیراتی کام تقریبا مکمل ہو چکا ہے اور ان کا آغاز اسی سال کردیا جائے گا۔ڈسٹرکٹ جیل ننکانہ صاحب کی منظوری 50ملین کی لاگت سے دے دی گئی ہے۔ PITBاور UNODCکے تعاون سے ڈسٹرکٹ جیل لاہور اور سنٹرل جیل  لاہور پر خود کارپریزن مینجمنٹ سسٹم کاآغازکیاگیاجوکہ سال 2019میں  پنجاب کی 20جیلوں پر نصب کر دیا جائے گا اور باقی ماندہ جیلوں اور دفاترمیں سال  2020میں نصب کر دیا جائے گا۔ویڈیو ٹرائل سسٹم 9سنٹرل جیلوں اور پنجاب کی 9ڈویژنل ATCsمیں  نصب کر دیا گیا ہے جبکہ بقایا جیلوں پرنصب کر دیا جائے گا۔ اس سے نہ صرف کرایہ کی مد میں بچت ہو گی بلکہ قیدیوں کا ٹرائل بھی اچھے طریقے سے ہوسکے گا۔جدید سکیورٹی آلات اور سی سی ٹی وی کیمرے 09 سنٹرل جیلوں اور 08نئی تعمیر شدہ جیلوں پر نصب کر دئیے گئے ہیں۔1892قیدی جو کہ جرمانہ، دیت، دمن اور ارش کے بدلے میں قید تھے حکومت پنجاب اور مخیر حضرات کے تعاون سے 345.8ملین روپے ادا کر کے رہا کروائے جا چکے ہیں۔ 86عدد واٹر فلٹریشن پلانٹس مختلف مخیرحضرات اور این جی اوز جن میں سرور فاؤنڈیشن بھی شامل ہے پنجاب کی جیلوں پر نصب کیے گئے۔سرور فاؤنڈیشن کے تعاون سے 100عدد سلائی مشینیں پنجاب کی 15مختلف جیلوں پر مہیا کی گئی ہیں۔سرور فاؤنڈیشن کے تعاون سےHCVادویات Lavie 400 mgاور Lavanza 60 mgگولیاں پنجاب کی 8مختلف جیلوں پر مہیاکی گئیں۔پنجاب کی 19جیلوں پر لٹریسی سنٹرز قائم کیے گئے ہیں۔ ایڈزکنٹرول پروگرام پنجاب کے تعاون سے 42140اسیران کی بلڈ سکریننگ کی گئی جن میں سے1084اسیران کاعلاج معالجہ کیا جا رہاہے۔

مزید : علاقائی