بھارتی فوج میں 7400افسران کی کمی، نوجوان شمولیت کی رغبت نہیں رکھتے: آرمی چیف کا اعتراف

    بھارتی فوج میں 7400افسران کی کمی، نوجوان شمولیت کی رغبت نہیں رکھتے: آرمی ...

  



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت کے نئے آرمی چیف جنرل منوج مکند نروانے اعتراف کیا ہے کہ ان کی فوج کو افسران کی کمی کا سامنا ہے۔ بھارتی بحری اور فضائی افواج میں بھی افسران کی کمی ہے تاہم بّری فوج میں افسران کی کمی اس سے کئی گنا زیادہ ہے۔بھارتی فوج میں اس وقت تقریبا 7400 افسران کی کمی ہے یعنی انڈین فوج میں لیفٹیننٹ یا اس سے اوپر کے عہدوں کیلئے جتنے افسران کی ضرورت ہے وہ موجود نہیں۔بھارتی آرمی چیف کا کہنا تھا کہ انڈیا کی (بقیہ نمبر10صفحہ12پر)

بحری اور فضائی افواج میں بھی افسران کی کمی ہے تاہم بّری فوج میں افسران کی کمی اس سے کئی گنا زیادہ ہے۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ بھارتی حکومت کے متعدد اقدامات کے باوجود بھارتی نوجوان فوج میں شمولیت کی رغبت نہیں رکھتے، بھارتی فوج گزشتہ 4 سال سے مختلف ریاستوں میں بھرتی کیمپس قائم کر رہی ہے جہاں عوام کو فوج میں مہیا سہولیات اور تنخواہوں میں اضافے سے متعلق آگاہی دی جاتی ہے اس کے باوجود کوئی خاص کامیا بی دیکھنے میں نہیں آئی۔ اگست 2018میں فوج کے شعبہ تعلقات عامہ نے بتایا تھا کہ انڈین وزارت دفاع کے مطابق یکم جنوری 2018 تک انڈین فوج کے پاس 42ہزار سے زیادہ افسران تھے جبکہ 7298 افسران کی کمی تھی۔اسکے ایک سال بعدیہ تعداد بڑھ کر 7399 ہو گئی۔ یعنی انڈین فوج میں لیفٹیننٹ یا اس سے اوپر کے عہدوں کے لیے جتنے افسران کی ضرورت ہے ان میں 100 افسران کی مزید کمی ہوگئی۔

بھارتی آرمی چیف

مزید : ملتان صفحہ آخر