جتوئی:سردار کوڑے خان مقبرے، مسجد کی بجلی بند، لوگوں کااحتجاج

  جتوئی:سردار کوڑے خان مقبرے، مسجد کی بجلی بند، لوگوں کااحتجاج

  



جتوئی (نمائندہ پاکستان) تحصیل جتوئی میں جنوبی ایشیاء کے سب سے بڑے ڈونر سردار کوڑاخان کا مقبرہ و مسجد کسی مسیحا کی منتظر ہیں غریبوں کی فلاح و بہبود و تعلیم کے لیے 87 ہزار کنال اراضی وقف کرنا کا مقبرہ و مسجد بجلی سے محروم ہیں اور وضو کے لیے پانی تک میسر نہیں ہے تفصیلات کے مطابق نمازیوں (بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

نے محمد شکیل محمد وسیم محمد بابر محمد شریف محمد علی غلام عباس ماما یقوب محمد مشتاق خادم حسین ملازم حسین اعجاز حسین وا دیگر شہریوں نے احتجاج کرتے ہوئے کہا کہ جنوبی ایشیاء کا سب سے بڑا ڈونر سردار کوڑاخان جنہوں نے غریبوں کی فلاح و بہبود تعلیم کے لیے 87 ہزار کنال اراضی وقف کیں مگر انکا مقبرہ و مسجد کسی مسیحا کے منتظر ہیں سردار کوڑاخان کے مقبرہ و مسجد میں بجلی کی فراہمی نہیں ہے اور نہ ہی میڑ موجود ہے اور نہ نمازیوں کو وضو کے لیے پانی دستیاب ہے نمازیوں نے یہ بھی کہا کہ بہت افسوس کی بات ہے اتنا بڑا ڈونر سردار کوڑا خان کا مقبرہ اور مسجد کا میڑ نہ ہونے کی وجہ سے بجلی نہیں ہے اور کبھی کسی سے بجلی لیتے ہیں اور کبھی کسی سے اور اسے بھی واپڈا حکام منقطع کرجاتے ہیں کوڑا خان ٹرسٹ کے سربراہان و حکام بالا وزٹ تک محدود ہے اور بلند و بانگ دعوے کیے جاتے ہیں مگر کوئی عملی اقدام نظر نہیں آتا ہے اور کوڑاخان ٹرسٹ سے حاصل ہونے والی کروڑوں روپے کی آمدن نہ جانے کہاں جارہی ہیں اور مسجد کی حالت عرصہ دراز سے خستہ حالی کا شکار ہے اسے بھی دوبارہ تعمیر نہیں کیا گیا ہے نمازیوں نے مسجد کے باہر احتجاج کرتے ہوئے حکام بالا و ٹرسٹ سربراہان سردار کوڑاخان سے مطالبہ کیا ہے کہ مسجد و مقبرہ سردار کوڑاخان کی بجلی کی فراہمی کو مستقل بنیاد پر جلد از جلد حل کیا جائے اور اسکے میڑ کا مستقل بندوبست کیا جائے اور مسجد کی ازسر نو تعمیر کی جائے۔

احتجاج

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...