صوبے کے بڑے ہسپتالوں کی ایمرجنسی میں ادویات فراہمی یقینی بنائی جائے:شہرام ترکئی

صوبے کے بڑے ہسپتالوں کی ایمرجنسی میں ادویات فراہمی یقینی بنائی جائے:شہرام ...

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)صوبے کے بڑے ہسپتالوں کے شعبہ ایمرجنسی میں مفت ادویات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔ ہاسپیٹل منیجمنٹ کو مزید بہتر، بھرتیوں کا شفاف میکنزم اور صفائی کا بہترین انتظام کیا جائے۔ یہ ہدایات خیبر پختونخوا کے وزیر صحت شہرام خان ترکئی کی جانب سے صوبے کے میڈیکل ٹیچنگ ہسپتالوں کے اجلاس کے دوران دی گئیں۔ اجلاس میں حیات آباد میڈیکل کمپلیکس، لیڈی ریڈنگ ہسپتال، خیبر ٹیچنگ ہسپتال اور ایوب ٹیچنگ ہسپتال سمیت بنوں، ڈی آئی خان، گومل اور نوشہرہ کے ایم ٹی ہسپتالوں کے افسران نے شرکت کی۔ اس موقع پر سیکریٹری ہیلتھ یحییٰ اخونزادہ بھی موجود تھے۔ افسران کی جانب سے اپنے اداروں کے مسائل اور درپیش چیلنجز سے اجلاس کو آگاہ کیا گیا۔ وزیرِ صحت شہرام خان ترکئی کا ایم ٹی آئی ہسپتالوں کے افسران کو ہدایت کی وہ مریضوں کا خاص خیال رکھیں اور ایسا میکنزم بنائیں کہ ڈاکٹرز پر بھی کام کا بوجھ نہ پڑے اور وہ آسانی سے مریضوں کا علاج معالجہ کر سکیں۔ شہرام خان ترکئی نے کہا کہ ہسپتالوں میں بستروں کی منیجمنٹ کا بھی جدید نظام رائج کیا جائے اور اس کے لیے ٹیکنالوجی سے کام لیا جائے اور کوئی اپلیکیشن بنائی جائے۔ اجلاس کے دوران یہ بات بھی سامنے آئی کہ ایم ٹی آئی ہسپتالوں پر ذیادہ بوجھ ریفرل مریضوں کا ہے جس سے نمٹنے کے لیے فوری اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ شہرام خان ترکئی نے کہا کہ ہسپتالوں کی ایمرجنسی میں مفت ادویات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔ نئی بھرتیوں کے لیے میرٹ اور شفاف نظام کی ضرورت ہے اور ہسپتال انتظامیہ بغیر کسی دباؤ کے خالصتاً میرٹ کو ترجیح دے۔ اس سلسلے میں غیر جانبدار ٹیسٹنگ ایجنسی کی خدمات بھی حاصل کی جا سکتی ہیں۔ وزیر صحت نے بھرتیوں اور ایم ٹی آئی ہسپتالوں کے مسائل کے حوالے سے کمیٹیاں تشکیل دینے کی بھی ہدایت کی

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...